لاہور کے علاقے کلمہ چوک میں ڈکیتی کی کی کوشش کے دوران مزاحمت کرنے پر یونیورسٹی پروفیسر جاں بحق ہوگئے

14 فروری 2018 (08:15)
 لاہور کے علاقے کلمہ چوک میں ڈکیتی کی کی کوشش کے دوران مزاحمت کرنے پر یونیورسٹی پروفیسر جاں بحق ہوگئے

لاہور کے علاقے کلمہ چوک میں گزشتہ رات دس بجے کے قریب پروفیسر ڈاکٹر تنظیم اکبر چیمہ کار پر سوار گزر رہے تھے کہ دو موٹرسائیکل سواروں نے ان کو گن پوائنٹ پر روکا اور ڈکیتی کی کوشش کے دوران مزاحمت پر گولی مار کر زخمی کر دیا تھا ، انہیں فوری جنرل ہسپتال منتقل کیا گیا تھا جہاں وہ زخمیوں کی تاب نہ لا کر جان کی بازی ہار گئے،مقتول پروفیسر کی لاش پوسٹمارٹم کے لئے جنرل ہسپتال ڈیڈ ہاّوس منتقل کر دی گئی، ڈاکٹر تنظیم اکبر چیمہ نجی یونیورسٹی میں پروفیسرکے عہدے پر فائز تھے، گلبرگ پولیس نے واقعہ کی تحقیقات شروع کر دی ہیں

لاہور کے علاقے گلبرگ میں نامعلوم افراد کی فائرنگ سے پروفسر جاں بحق ہو گیا، پولیس ذرائع کے مطابق واقعہ ڈکیتی مزاحمت نہیں بلکہ دیرینہ دشمنی کا شاخسانہ ہے،،، وزیراعلی پنجاب شہباز شریف نے واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے سی سی پی او سے رپورٹ طلب کرلی
لاہور کے علاقے گلبرگ میں نامعلوم افراد کی فائرنگ سے گورنمنٹ کالج یونیورسٹی کا پروفسر جاں بحق ہو گیا،،، پولیس کے مطابق جی سی یو شعبہ باٹنی کے ایسوسی ایٹ پروفیسر تنظیم اکبر چیمہ اپنی کار میں سوار تھے کہ کلمہ چوک کے قریب نامعلوم موٹر سائیکل سواروں نے ان پر فائرنگ کردی،،، تنظیم اکبر چیمہ کو شدید زخمی حالت میں جناح ہسپتال متنقل کردیا گیا جہاں وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گئے۔ ان کے سینے اور ٹانگ میں گولیاں لگیں۔ واقعہ کے بعد پولیس نے جائے وقوع سےشواہد اکٹھے کئے،، ابتدائی تحقیقات میں واقعہ کو ڈکیتی کی واردات کہا گیا،، بعد میں پولیس نے اسے دیرینہ دشمنی کا شاخسانہ قرار دے دیا۔ تاہم واقعہ کی تحقیقات جاری ہیں، دوسری جانب وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے واقعے کانوٹس لیتے ہوئے سی سی پی او سے رپورٹ طلب کرلی ہے،انہوں نے ملزمان کی فوری گرفتاری کا حکم بھی دیا۔



زینب قتل کیس کا فیصلہ

لاہور کی کوٹ لکھپت جیل میں جج سجاد احمد نےزینب قتل کیس کا فیصلہ سنادیا۔ عدالت ...