کاروباری برادری ایمانداری سے ٹیکس ادا کرے۔ چئیرمین ایف بی آر

کاروباری برادری ایمانداری سے ٹیکس ادا کرے۔ چئیرمین ایف بی آر

فیڈرل بورڈ آف ریونیو کے چئیرمین ڈاکٹر محمد ارشاد نے کہا ہے کہ ایف بی آر کا عملہ ٹیکس گزار افراد اور کاروبار پر چھاپے نہیں مارے گا۔ اپنی آمدنی کو کم ظاہر کرنے والے اگر ایک ماہ کے اندر صحیح ٹیکس ریٹرن فائل کریں گے تو ان سے کوئی پوچھ گچھ نہیں ہو گی اور انکے جمع کروائے ہوئے ریٹرنز کو درست تسلیم کر لیا جائے گا۔ ایف بی آر کے چئیرمین ڈاکٹر محمد ارشاد نے یہ بات ایف پی سی سی آئی کے صدر زبیر طفیل سے ایک اہم ملاقات کے دروان کہی۔ انھوں نے کہا کہ ایف بی آرایک قومی ادارہ ہے جس کا مقصد کسی کو ہراساں کرنا نہیں بلکہ ملکی ترقی کی رفتار بڑھاناہے۔ قبل ازیں ایف پی سی سی آئی کے صدر زبیر طفیل نے ایف بی آر کے چئیرمین کو آگاہ کیا کہ کاروباری برادری ملکی ترقی میں اہم کردار ادا کر رہی ہے مگر اب بلاجوازچھاپوں سے سے بزنس کمیونٹی میں خوف و ہراس پھیل رہا ہے جس سے انکی کاروباری سرگرمیاں متاثر ہو رہی ہیں۔ انھوں نے چئیرمین ایف بی آر سے مطالبہ کیا کہ ماتحت عملہ کو ہدایت کریں کہ ٹیکس گزاروں پر چھاپے نہ مارے جائیں کیونکہ اس سے ایماندار ٹیکس گزاروں کے مسائل میں بھی اضافہ ہو رہا ہے اور ساری توجہ ٹیکس نیٹ بڑھانے کیلئے نئے ٹیکس گزار تلاش کرنے پر دی جائے۔ انھوں نے کہا کہ کاروباری برادری بھی جلد از جلد ٹیکس ریٹرن جمع کروائے تاکہ قانونی کاروائی اور دیگر مسائل سے بچا جا سکے۔ زبیر طفیل نے کاروباری برادری پر زور دیا کہ اپنی حقیقی آمدنی کے مطابق ٹیکس ادا کیا جائے تاکہ ملکی ترقی کے عمل کی رفتار بڑھائی جا سکے۔

Most Popular