پوٹھوہار وادی میں 15ہزار ایکڑ پر زیتون کے درخت لگانے کا منصوبہ

پوٹھوہار وادی میں 15ہزار ایکڑ پر زیتون کے درخت لگانے کا منصوبہ

ای یونائیٹڈ اسٹیٹ ایجنسی فار انٹرنیشنل ڈویلپمنٹ (یو ایس ایڈ)اور گورنمنٹ آف پنجاب کے باہمی اشتراک سے مئی 2016 میں دی الیو ڈویلپمنٹ گروپ (او جی ڈی)کا قیام عمل میں لایا گیا۔ اس گروپ کے تحت پوٹھوہار وادی کے علاقے کو زیتون کی پیداوار کے لئے مختص کر دیا گیا جو کہ پاکستان میں زیتون کی پیداوار کے لئے اٹھائے جانے والا انقلابی اقدام ثابت ہوگا۔ اس سلسلے میں اولیو ڈویلپمنٹ گروپ (او جی ڈی) کی سالانہ کارکردگی رپورٹ پر نظرثانی کے لئے ایک اجلاس منعقد کیا گیا جس میں زیتون کی پیداوار کے حوالے سے مطالعاتی تجزیہ اور مستقبل کے چیلنجز کا احاطہ کیا گیا۔ او جی ڈی کی سربراہی کے فرائض سیکرٹری زراعت پنجاب محمد محمود انجام د یتے ہیں۔ مذکورہ گروپ کے اجلاس میں یو ایس ایڈ /پاکستان مشن ڈائریکٹر جیری بیسن اور دیگر متعلقہ افراد نے شرکت کی۔ اس موقع پر جیری بیسن نے کہا کہ میں پنجاب کے ایگریکلچر ڈیپارٹمنٹ اور یو ایس ایڈ /پیپ کی ٹیم اور گروپ کی کاوشوں اور انتھک محنت پر انہیں خراج تحسین پیش کرتا ہوں۔ انہوں نے مزید کہا کہ میں یہاں تمام افراد کو اولیو ڈویلپمنٹ گروپ کے پہلے سالانہ اجلاس کے انعقاد پر دل کی گہرائیوں سے مبارکباد پیش کرتا ہوں اور یہ اقدام زیتون کی پیداوار کے لئے ایک اہم سنگ میل ثابت ہوگا۔ یو ایس ایڈ کا پراجیکٹ پیپ 14.98ملین روپے کی لاگت سے مکمل ہوگا۔ یہ پنجاب میں ہارٹیکلچر ، لائیوسٹاک اور ڈیری سیکٹر اور فروغ کے لئے معاون ثابت ہوگا۔ اس سلسلے میں فروری 2017کو یو ایس ایڈ کے پنجاب انیبلنگ انوائرمنٹ پراجیکٹ (PEEP)نے بارانی کلچر ریسرچ انسٹی ٹیوٹ کے ساتھ ایک مفاہمتی یاد داشت پر دستخط کئے جس کے تحت اولیو ریسرچ سنٹر اور الیو فائونڈیشن کی جانب سے اس کی پیداوار کے لئے ایک معاہدہ طے پا گیا ہے۔ یو ایس ایڈ پنجاب ایگریکلچر ڈیپاٹمنٹ کو زیتون کی یقینی پیداوار کے حصول کے لئے تکنیکی معاونت بھی فراہم کر رہا ہے۔ اس ہدف کے حصول کے لئے حکومت پنجاب پانچ سالوں کے دوران کسانوں کو 2ملین پودے فراہم کرے گی جس سے تقریباً 15ہزار ایکڑ پر زیتون کے درخت لگائے جائیں گے۔

Most Popular