کینو کی پیداوار کو سٹرس سلا اور گریننگ کی بیماریوں کا سامنا

کینو کی پیداوار کو سٹرس سلا اور گریننگ کی بیماریوں کا سامنا

پاکستان میں ترشاوہ پھلوں خصوصاً کینو کی پیداوار کو سٹرس سلا اور گریننگ کی بیماریوں کا سامنا ہے جس کے باعث اکثر پودے 5سے 8سال کی عمر میں سوکھ کر مر نا شروع ہو گئے ہیں۔ ان بیماریوں پر قابو پانے کیلئے ماہرین زراعت اور زرعی سائنسدانوں کو مربوط کاوشیں بروئے کار لانا ہوں گی تاکہ ترشاوہ پھلوں کو نقصان سے بچانے سمیت اس کی بھر پور پیداوار حاصل کرتے ہوئے ملکی ضروریات پوری کرنے کے بعد اضافی پیداوار برآمد کرکے قیمتی زرمبادلہ کاحصول ممکن بنایاجاسکے۔ سٹرس فروٹ ایکسپورٹرز ایسوسی ایشن کے ترجمان نے بتایاکہ کھجور اور کینو کی پاکستانی سوسائٹی میں اہمیت کے پیش نظر ان کو لاحق بیماریوں پر قابو پانا وقت کی اہم ترین ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ دنیا بھر میں اتنی بڑی مقدار میں سستے پھل کہیں بھی میسر نہیں جتنے پاکستان میں دستیاب ہیں ۔انہوںنے کہا کہ کینو کی وجہ سے پاکستانیوں میں وٹامن کی کمی کا خاتمہ یقینی بنانے میں مدد ملی ہے ورنہ اگر یہ پھل نہ ہوتا تو پاکستان میں نابینا پن میں کئی گنا اضافے کا خطرہ تھا۔ انہوں نے سائنسدانوں پر زور دیا کہ وہ سائنسی تحقیق میں اپنا ذاتی قدکاٹھ بڑھانے کے ساتھ ساتھ اپنے علم کو معاشرے کی بہتری اور ترقی کےلئے بھی استعمال کرنے پر توجہ دیں۔

Most Popular