بجلی تقسیم کرنے والی کمپنیوں نےقومی خزانے کو 33 ارب 20کروڑ روپے سے زائد کا جھٹکا لگا دیا

بجلی تقسیم کرنے والی کمپنیوں نےقومی خزانے کو 33 ارب 20کروڑ روپے سے زائد کا جھٹکا لگا دیا

وقت نیوز کوحاصل ہونے والی دستاویزات کے مطابق بجلی کی تقسیم کارکمپنیوں نے قواعد کی خلاف ورزی کرتے ہوئے سال دو ہزار چودہ، پندرہ کے دوران مجموعی طورپر دو ارب ساٹھ کروڑ سے زائد یونٹ ضائع کیے،جس سے قومی خزانے کو تینتیس ارب بیس کروڑ روپے کا نقصان ہوا، فیصل آباد الیکڑک سپلائی کمپنی نے دس کروڑ ترانوے لاکھ یونٹس ضائع کیے جس سے ایک ارب چوہتر کروڑ روپے کا نقصان ہوا، حیسکو نےچھتیس کروڑ بائیس لاکھ یونٹس ضائع کرکے خزانےکوچار ارب تراسی کروڑ روپے کا جھٹکا دیا، اعلیٰ معیار کی دعویدارآئیسکو نےبھی مقررہ حد سے سات کروڑ تریسٹھ لاکھ یونٹ ضائع کرڈالے اور خزانےکو اکیانوے کروڑ چھپن لاکھ روپے کاٹیکا لگایا، لیسکو کی نااہلی سے چوالیس کروڑ تہتر لاکھ یونٹس ضائع ہوئے، جس سےخزانے کو پانچ ارب انسٹھ کروڑ روپے کا نقصان اٹھانا پڑا، میپکو کی نااہلی انتظامیہ نےتین ارب باسٹھ کروڑ جب کہ پیسکو کی وجہ سے پندرہ ارب سے زائد کانقصان اٹھانا پڑا،،سیپکو اور ٹیسکو نے بھی بالترتیب ستر لاکھ اور دو کروڑ چھتیس کروڑ یونٹس ضائع کرکے قومی خزانے کو اربوں روپے کا نقصان پہنچایا

Most Popular