جگنی کےخالق معروف فوک گلوکار عالم لوہارکی تینتیس ویں برسی آج منائی جارہی ہے۔

جگنی کےخالق معروف فوک گلوکار عالم لوہارکی تینتیس ویں برسی آج منائی جارہی ہے۔

عالم لوہار،یکم مارچ انیس سواٹھائیس کوگجرات میں پیدا ہوئے، لوک موسیقی خصوصاَ لوک داستانیں گانےکا شوق بچپن سے جوانی اورپھرآخری سانس تک لوہارمیں پنپتارہا۔ گانے کے شوق کے لیے عالم لوہارنےگھرتک چھوڑدیااورتھیڑکمپنیوں سےوابستہ ہوگئے اس قربانی پرکامیابی نے کم عمری میں ہی ان کے قدم چومے. تھیٹر کمپنی بنانےکےساتھ ساتھ قیام پاکستان کےبعد عالم لوہار نےریڈیو پاکستان اورپھر پاکستان ٹیلی ویژن پربھی علاقائی موسیقی کی بے پناہ خدمت کی،عالم لوہار انیس سواکہتر میں ملکہ الزبتھ کےمہمان بھی بنے۔ سابق صدرایوب خاں بھی ان کے بے حد مداح تھے،عالم لوہار نے فوک موسیقی میں نئی جہت روشناس کروائی۔ انہیں ہیر وارث شاہ گانے پر شہرت حاصل ہوئی۔ انہیں یہ اعزاز حاصل ہے کہ انہوں نے ہیر وارث شاہ کوچھتیس مختلف انداز میں گایا۔ انہیں ناصرف گانے کی صنف ” جگنی “ بلکہ صوفیانہ کلام گانے میں بھی ملکہ حاصل تھا۔ ان کے معروف ترین گانوں میں ” واجاں ماریاں بلایا کئی وار” بول مٹی دیا باویا “ سیف الملوک، قصہ کربلا اور جگنی قابل ذکر ہیں۔ موسیقی کونئی جہت بخشنےوالے یہ عظیم لوک گلوکارتین جولائی انیس سواناسی میں ایک ٹریفک حادثےمیں انتقال کرگئےتھے۔

About the author /

Waqt News

Waqt News Web Team

Most Popular