پنجاب کے مختلف شہروں میں ڈاکٹروں کی ہڑتال کے باعث بروقت طبی امداد نہ ملنے پر جاں بحق ہونے والے مریضوں کی تعداد پندرہ ہوگئی ہے۔

پنجاب کے مختلف شہروں میں ڈاکٹروں کی ہڑتال کے باعث بروقت طبی امداد نہ ملنے پر جاں بحق ہونے والے مریضوں کی تعداد پندرہ ہوگئی ہے۔

ینگ ڈاکٹرز نے ایمرجنسی میں بھی کام چھوڑدیا ہے جس کے باعث لاہور کے میو اسپتال میں گوجرانوالہ سے تعلق رکھنے والا نصیر ولی چل بسا۔ مرنے والوں میں ڈیڑھ سال کا فہد بھی شامل ہے جسے ڈاکٹر ہسپتال میں تڑپتا چھوڑ کر چلے گئے تھے۔ پولیس کے مطابق بچے کی ہلاکت پرآٹھ ڈاکٹروں کے خلاف قتل کا مقدمہ بچے کے والد کی مدعیت میں درج کیا گیا ہے۔ ادھر ادھر فیصل آباد کے الائیڈ اسپتال میں خاتون سمیت چار افراد طبی امداد نہ ملنے سے انتقال کرگئی۔ ادھر ملتان میں بھی بروقت طبی امداد نے ملنے کے باعث تین مریض زندگی کی بازی ہار گئے ہیں۔ پنجاب کے مختلف شہروں میں بروقت طبی امداد نہ ملنے پر اب تک پندرہ مریض اپنی جان گنوا بیٹھے ہیں۔ ان کے علاوہ ڈاکٹرز کے کام چھوڑنے کی وجہ سے پنجاب بھر میں زندگی اور موت کی کشمکش میں مبتلا سینکڑوں میں تشویشناک حالت میں مسیحا کی واپسی کے منتظر ہیں۔

About the author /

Waqt News

Waqt News Web Team

Most Popular