پاک بھارت مذاکرات: کشمیراور دہشتگردی سمیت تمام مسائل مذاکرات کے ذریعےحل کرنے پر اتفاق۔

پاک بھارت مذاکرات: کشمیراور دہشتگردی سمیت تمام مسائل مذاکرات کے ذریعےحل کرنے پر اتفاق۔

نئی دہلی میں دوروزہ پاک بھارت سیکرٹری خارجہ مذاکرات کے بعد مشترکہ پريس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے سيکريٹری خارجہ جليل عباس جيلانی کا کہنا تھا کہ مذاکرات ميں کشمیر، دہشتگردی اور ابو جندال کے معاملے پر تفصيلی گفتگو ہوئی۔ بھارت پر واضح کیا ہے کہ کوئی پاکستانی ايجنسی بھارت ميں دہشتگردی ميں ملوث نہيں۔ پاکستان دہشتگردی کو دونوں ملکوں کا مشترکہ دشمن سمجھتا ہےجس کے خاتمے کے لیے سنجیدہ کوششوں کی ضرورت ہے۔ ايک دوسرے پر الزام تراشی کرينگے تو کسی نتيجے پر نہيں پہنچيں گے۔ انہوں نے بھارت کو ممبئی حملوں کی مشترکہ تحقیقات کی دعوت بھی دی۔ جلیل عباس جیلانی کا کہنا تھا کہ خطے ميں امن و امان کی ذمہ داری دونوں ممالک پر عائد ہوتی ہے۔ اس موقع پر بھارتی سيکريٹری خارجہ رنجن متھائی نے کہا کہ پاکستان کو ممبئی حملے سے متعلق مزيد شواہد ديے گئے ہيں اور پاکستانی ہم منصب کيساتھ ابو جندل کا معاملہ بھی اٹھاياگيا ہے۔ پاکستانی سیکرٹری خارجہ سے ملاقات ميں خطے ميں امن اور دہشتگردی سے متعلق گفتگو ہوئی،اعتماد سازی کو فروغ دینے پر بھی اتفاق کیا گیا۔ مذاکرات ميں اقتصادی اور معاشی معاملات زير غور آئےاور تجارت آگے بڑھانے پر بھی بات کی گئی۔ رجن متھائی نے کہا کہ پاک بھارت کرکٹ بحالی کا فیصلہ دونوں ممالک کے کرکٹ بورڈ کرینگے۔ پاک بھارت سیکرٹری خارجہ مذاکرات کا آئندہ دور ستمبر میں اسلام آباد میں ہوگا۔

About the author /

Waqt News

Waqt News Web Team

Most Popular