لاہور اور سندھ سمیت ملک بھر کی وکلاء برادری نے دوہری شہریت بل اور توہین عدالت ترمیمی بل کے خلاف کل یوم سیاہ منانے اور عدالتوں کے بائیکاٹ کا اعلان کردیا۔

لاہور اور سندھ سمیت ملک بھر کی وکلاء برادری نے دوہری شہریت بل اور توہین عدالت ترمیمی بل کے خلاف کل یوم سیاہ منانے اور عدالتوں کے بائیکاٹ کا اعلان کردیا۔

لاہور بار ایسوسی ایشن کے عہدیداران نے یہ اعلان ایل ڈی اے کمپلیکس میں پریس کانفرنس کے دوران کیا۔ بارعہدیداران کا کہنا تھا کہ توہین عدالت کے قانون میں ترمیم کو قومی اسمبلی سے پاس کروانے اور دوہری شہریت بل کے خلاف جمعرات کویوم سیاہ منایا جائے گا، وکلاء بازؤوں پرسیاہ پٹیاں باندھیں گے اور بار رومز پر سیاہ پرچم بھی لہرائے جائیں گے۔ کراچی میں سندھ بار کونسل اور کراچی بار کے نمائندوں نے بھی مشترکہ پریس کانفرنس کے دوران اعلان کیا کہ دوہری شہریت بل آئین کے متصادم ہے اس لئے وکلاء عدالتوں کا بائیکاٹ کریں گے اور پیش نہیں ہونگے۔ انکا کہنا تھا کہ پارلیمنٹ کا کوئی ممبر دوہری شہریت نہیں رکھ سکتا اور ہمارا آئین بھی یہی کہتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ارکین پارلیمنٹ اپنی ذاتی خواہشات پر یہ بل منظور کرانا چاہتے ہیں لیکن وکلاء سپریم کورٹ کی تذلیل کسی کو نہیں کرنے دیں گے۔ خیبرپختونخوا بار کونسل نے بھی توہین عدالت بل کی منظوری کے خلاف کل عدالتی بائیکاٹ کا اعلان کیا ہے۔

About the author /

Waqt News

Waqt News Web Team

Most Popular