پاکستانی حکومت کی جانب سے بھارت کوپسندیدہ ملک قراردیئےجانے کیخلاف جماعت اسلامی نے مختلف شہروں میں احتجاجی مظاہرے کئے

پاکستانی حکومت کی جانب سے بھارت کوپسندیدہ ملک قراردیئےجانے کیخلاف جماعت اسلامی نے مختلف شہروں میں احتجاجی مظاہرے کئے

بھارت کوپسندیدہ ملک قراردئیے جانے کے خلاف جماعت اسلامی نے نیشنل پریس کلب اسلام آباد کے باہر احتجاجی مظاہرہ کیا۔ مظاہرین نے فیصلے کو اٹھارہ کروڑپاکستانیوں اور کشمیریوں کی جدوجہد اور قربانیوں کی توہین قرار دیا۔لاہورمیں بھی منصورہ کے باہر جماعت اسلامی نے احتجاجی مظاہرہ کیا ۔ احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے جماعت اسلامی کے رہنما لیاقت بلوچ کا کہنا تھا کہ بھارت کو پسندیدہ ملک کا درجہ دینا کشمیریوں کے خون کا سودا کرنے کے برابرہے ۔ ملک بھر کی طرح فیصل آبا د میں بھی جماعت اسلامی نے یوم احتجاج منا یا اورنماز جمعہ کے بعد احتجاجی مظاہرے کئے۔ ادھر لوئر دیر میں نماز جمعہ کے بعد جماعت اسلامی نے بھارت کو پسندیدہ ملک قرار دینے کےخلاف احتجاجی مظاہرہ کیااور حکومتی فیصلے کی سخت الفاط میں مذمت کی ۔ڈیرہ غازیخان میں بھی مظاہرین نے بھارت کوپسندیدہ ملک قراردینے کے فیصلے کی شدید مذمت کی اور فیصلہ فوری واپس لینے کا مطالبہ کیا ۔بدین میں بھی جماعت اسلامی کے زیراہتمام لوگوں کی ایک کثیر تعداد نے احتجاجی مظاہرہ کیا اور بھارت کو پسندیدہ ملک قرار دیئے جانے کی شدید مذمت کی ۔

About the author /

Waqt News

Waqt News Web Team

Most Popular