افغانستان کے دارالحکومت کابل میں ایک خود کش حملےکے دوران سابق صدر اور افغان امن کونسل کے سربراہ برہان الدین ربانی جاں بحق ہوگئے۔

افغانستان کے دارالحکومت کابل میں ایک خود کش حملےکے دوران سابق صدر اور افغان امن کونسل کے سربراہ  برہان الدین ربانی جاں بحق ہوگئے۔

برہان الدین ربانی دارالحکومت کابل میں اپنی رہائش گاہ کے قریب ہونے والے خودکش حملے میں جاں بحق ہوئے۔ حملے کے بعد امدادی ٹیمیں اور ایمبولینس موقع پر پہنچ گئیں جبکہ پولیس نے ارد گرد کے علاقے کو حصار میں لے لیا۔پولیس حکام نے برہان الدین ربانی کے جاں بحق ہونے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ خود کش حملے میں سابق صدر برہان الدین ربانی کے گھر کو نشانہ بنایا گیا ۔حملے میں برہان الدین کے علاوہ افغان امن کونسل کے ایک اور سینیئر رکن محمد معصوم زخمی ہوئے ۔سینیئر افغان حکام کا کہنا ہے کہ افغان حکومت گذشتہ ایک سال سے طالبان کو مذاکرات کی میز پر لانے کی کوشش کر رہی ہے جبکہ برہان الدین ربانی حامد کرزئی حکومت کی افغان امن کونسل کے سربراہ بھی تھے۔ واضح رہے کہ اپریل میں طالبان کی جانب سے امن کونسل کے اراکین کو نشانہ بنائے جانے کی دھمکی بھی دی گئی تھی جبکہ برہان الدین ربانی چند ہفتے قبل طالبان کو افغانستان میں امن میں ناکامی اور معصوم افغانیوں کے قتل کا ذمہ دار بھی ٹھہرا چکے تھے۔ابھی تک طالبان سمیت کسی گروہ کی جانب سے واقعے کی زمہ داری قبول نہیں کی گئی

About the author /

Waqt News

Waqt News Web Team

Most Popular