پاکستان نظام بدلنے آئے ہیں۔ حکومت روٹی کپڑااور مکان نہیں دے سکتی تو وہ غیر آئینی ہے۔ حکومت کونظام کی بہتری کیلئے10جنوری کی مہلت۔ طاہر القادری

پاکستان نظام بدلنے آئے ہیں۔ حکومت روٹی کپڑااور مکان نہیں دے سکتی تو وہ غیر آئینی ہے۔ حکومت کونظام کی بہتری کیلئے10جنوری کی مہلت۔ طاہر القادری

مینارپاکستان لاہور میں عوامی جلسے سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر طاہر القادری کا کہنا تھا کہ قائد اعظم نے پاکستان چند لٹیروں اور وڈیروں کیلئے نہیں بنایا تھا۔ پاکستان سے بڑھ کر کوئی چیز نہیں، اٹھارہ کروڑ عوام قانون کی بالادستی کیلئے اٹھ کھڑے ہوں۔ انتہاپسندی کی راہ پر چلنے والے بھی اسی دھرتی کے بیٹے ہیں، ہتھیار اٹھانے والوں سے کہتا ہوں کہ مذاکرات کریں۔ طاہرالقادری کا کہنا تھا کہ وہ صاف ستھرے سیاسی عمل اور جمہوریت کے قائل ہیں۔ جس سیاست کا قائل ہوں وہ رسول اورصحابہ کرام کےاصولوں پرمبنی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ انکا ایجنڈا انتخابات ختم کرانا نہیں بلکہ انتخابی نظام میں اصلاحات ہیں۔ اگرحکومت روٹی کپڑااور مکان نہیں دے سکتی تو وہ غیر آئینی ہے۔ ملکی نظام مکمل طور پر ناکام ہوچکا ہے، پاکستان میں کوئی شعبہ قابل تعریف نہیں رہا۔ سیاست صرف سازشوں اور اگلا الیکشن جیتنے کا نام رہ گیا ہے۔ ڈاکٹر طاہرالقادری کا کہنا تھا کہ اگرفوج کی مداخلت کو روکنا ہے تو پارلیمنٹ کو موثر بنانا ہوگا، معاشرتی انصاف فراہم کرنا ریاست کی ذمے داری ہے۔ طاہرالقادری نے حکومت کو نظام کی بہتری کیلئے دس جنوری تک کی مہلت دیتے ہوئے کہا کہ ایسا نہ کرنے پر چودہ جنوری کو اسلام آباد کی جانب لاکھوں افراد کا مارچ کیا جائے گا

About the author /

Waqt News

Waqt News Web Team

Most Popular