کراچی،تین وکلا کے قتل کے خلاف ملک بھر کےوکلا برادری یوم سیاہ منارہی ہے، قاتلوں کی گرفتاری تک ہڑتال جاری رہے گی۔ وکلا

کراچی،تین وکلا کے قتل کے خلاف ملک بھر کےوکلا برادری یوم سیاہ منارہی ہے، قاتلوں کی گرفتاری تک ہڑتال جاری رہے گی۔ وکلا

گزشتہ روز کراچی میں نامعلوم افراد کی فائرنگ سے تین وکلا کے قتل کے بعد ملک بھر میں وکلا برادری سراپا احتجاج ہے اوراس سلسلے میں آج یوم سیاہ مناتے ہوئے عدالتی بائیکاٹ کیا جارہا ہے ۔کراچی بار کی جنرل باڈی کے اجلاس میں قاتلوں کی فوری گرفتاری کا مطالبہ کیا گیا۔صدرکراچی بار محمودالحسن نے کہا کہ پولیس اور رینجرز کراچی کے شہریوں کو تحفظ دینے میں ناکام ہوچکی ہے، وزیرداخلہ سندھ منظور وسان اورآئی جی سندھ کو فوری طور پر برطرف کیا جائے۔وکلا نے ایم اے جناح روڈ پر دھرنا بھی دیا۔وکلاء نے واضح کیا کہ جب تک قاتلوں کو گرفتار نہیں کیا جاتا، ہڑتال جاری رہے گی۔دوسری جانب سندھ ہائیکورٹ میں چیف جسٹس مشیر عالم کی سربراہی میں ہونے والے اجلاس میں آئی جی سندھ مشتاق شاہ ، ججز ، سندھ بارکونسل، پاکستان بار کونسل اور کراچی بار ایسوسی ایشن کے عہدیداروں نے شرکت کی۔اس موقع پر وکلاء کا کہنا تھا کہ وکلاء کی ٹارگٹ کلنگ معمول بن چکی ہے لیکن ان کے قاتلوں کو گرفتار نہیں کیا جارہا۔ادھرپنجاب بارکونسل کی اپیل پر بھی وکلا نے ماتحت عدالتوں کا مکمل بائیکاٹ کیا۔وکلا کا مطالبہ ہے کہ کراچی میں وکلا کے قاتلوں کوفوری گرفتار کرکے کیفرکردار تک پہنچایاجائے۔ وکلا کے قتل کےخلاف اسلام آباد،راولپنڈی ،سکھر، ملتان ،کوئٹہ، پشاور ،گوجرانوالہ اور دیگر شہروں میں بھی ہڑتال جاری ہے۔ ادھرچیف جسٹس افتخار محمد چوہدری نے کراچی میں وکلا کے قتل کی شدید مذمت کرتے ہوئے وکلا کو عدالتوں میں نہ پیش ہونے کی اجازت دے دی۔

About the author /

Waqt News

Waqt News Web Team

Most Popular