یمن میں حوثی باغیوں پر سعودی فوج کے فضائی حملے جاری

یمن میں حوثی باغیوں پر سعودی فوج کے فضائی حملے جاری

امریکی حکام کے مطابق سعودی عرب نے یمن میں حوثی باغیوں کے خلاف فضائی کارروائی سے قبل انہیں اعتماد میں لیا تھا۔ سعودی پریس ایجنسی کے مطابق یمن میں سعودی آپریشن کو سوڈان، مراکش اورمصرکی حمایت بھی حاصل ہے،باغیوں کیخلاف کارروائی میں سعودی فوج ایک سو لڑاکا طیاروں کے ساتھ جبکہ یو اے ای تیس ، بحرین ،کویت کے پندرہ پندرہ، قطر کے دس، اردن کے چھ لڑاکا طیارے حصہ لے رہےہیں۔ مصرکے چار جنگی جہاز بھی خلیج عدن کی طرف روانہ ہوگئےہیں۔ادھر ایران روس اور حزب اللہ نے سعودی کارروائی کو یمن کی علاقائی خودمختاری کی خلاف ورزی قرار دیا ہے، یمن میں ہزاروں افراد نے سعودیی عرب اور دیگرعرب ممالک کی کارروائی کے خلاف مظاہرہ کیا۔ایرانی حکام نے خبردار کیا ہے کہ یمن میں سعودی فوجی کارروائی علاقے میں تشدد کی آگ پھیلانے کا سبب بنے گی۔جبکہ سعودی عرب کا کہنا ہے کہ یمن میں ایران کی پشت پناہی والے حوثی باغیوں پر حملے کا مقصد ریاض کی نظر میں یمن میں ’صدر منصور ہادی کی قانونی حکومت‘ کو تحفظ فراہم کرنا ہے۔ ایرانی وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے کہا ہے کہ سعودی قیادت والے اتحاد کی طرف سے یمن میں کیے جانے والے فوجی حملوں میں محض مزید جانیں ضائع ہوں گی۔ دوسری جانب یورپی یونین نے خبردار کیا ہے کہ یمن میں جاری لڑائی سے خطے کی سلامتی کو خطرات لاحق ہو گئے ہیں۔ یورپی یونین کی سربراہ برائے خارجہ امور فیڈریکا موگیرینی کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ یمن کے تنازعے کا حل صرف مذاکرات سے ممکن ہے۔

About the author /

Waqt News

Waqt News Web Team

Most Popular