چینی صدر سے روسی وزیر اعظم کی ملاقات، 20 معاہدوں پر بھی دستخط

چینی صدر سے روسی وزیر اعظم کی ملاقات، 20 معاہدوں پر بھی دستخط

چینی صدر شی جن پنگ نے بیجنگ میں روسی وزیر اعظم دمتری میدوی دوف سے ملاقات کی۔چینی ذرائع ابلاغ کے مطابق صدرشی جن پنگ نے ملاقات کے دوران کہا کہ روس چین کا سب سے بڑا پڑوسی ملک اور اسٹریٹجک شراکت دار ہے۔انہوں نے کہا کہ چین رو س کے ساتھ مختلف شعبوں میں ہمہ گیر تعاون کو فروغ دے گا اور عالمی امور میں ہم آہنگی کو مضبوط بنائے گا تاکہ بنی نوع انسان کے ہم نصیب معاشرے کی تعمیر کو فروغ دیا جاسکے۔انہوں نے کہا کہ چین اور روس کو دی بیلٹ اینڈ روڈ کی تعمیر اور یوروایشیا اقتصادی یونین کو اچھی طرح منسلک کرنا چاہیئے اور آئس شاہراہ ریشم کی تعمیر کی جائے گی۔انہوں نے کہا کہ چین اور روس کے مابین ثقافتی تعاون کو بڑا فروغ ملا ہے۔دونوں ملکوں کو نہ صرف قومی سطح پر سرگرمیوں کا اچھی طرح انعقاد کرنا چاہیئے بلکہ علاقائی تبادلوں و تعاون کو بھی فروغ دینا چاہیئے۔روسی وزیراعظم نے روسی صدر کی جانب سے چینی صدر کے لیے نیک خواہشات کا حوالہ دیتے ہوئے چینی کمیونسٹ پارٹی کی انیسویں قومی کانگریس کے کامیاب انعقاد اور شی جن پنگ کے دوبارہ چینی کمیونسٹ پارٹی کی مرکزی کمیٹی کے جنرل سیکرٹری منتخب ہونے پر مبارکباد پیش کی۔انہوں نے کہاکہ رواں سال جولائی میں چینی صدر کے دورہ روس کے بعد فریقین کے تعاون کو مثبت پیش رفت حاصل ہوئی ہے۔روس اس پر مطمئن ہے اور چین کے ساتھ مزید تعاون و تبالے کرنے اور عالمی و علاقائی امور میں صلاح و مشورے اور ہم آہنگی کو مضبوط بنانے پر تیار ہے۔دونوں رہنماﺅں کی باہمی ملاقات میں نارتھ پولر سی روٹ (قطب شمالی کے بحری راستے) اور سلک روڈ آن دی آئس جیسے منصوبوں کو باہمی تعاون سے ترقی دینے کے منصوبوں پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔روسی وزیر اعظم کے دورہ کے دوران سرمایا کاری، توانائی، فنانس اورایروسپیس جیسے شعبوں میں تعاون کے 20 سے زیادہ معاہدوں پر بھی دستخط ہوئے۔

Most Popular