وائٹ ہاﺅس کے بیان میں چین کا نام غلط لکھنے پر امریکا کی معذرت

 وائٹ ہاﺅس کے بیان میں چین کا نام غلط لکھنے پر امریکا کی معذرت

چین نے کہا ہے کہ امریکی حکام نے وائٹ ہاﺅس کے ایک بیان میں چین کا نام غلط لکھنے پر معذرت کرلی ہے۔امریکی نشریاتی ادارے کے مطابق گزشتہ ہفتے جرمنی کے شہر ہیمبرگ میں جی20 سربراہی اجلاس کے موقع پر امریکا کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ اور چین کے صدر ژی جن پنگ کے درمیان ملاقات کے بعد وائٹ ہاﺅس نے جو اعلامیہ جاری کیا تھا اس میں صدر جن پنگ کو "پیپلز ری پبلک آف چائنا" کے بجائے صرف "ری پبلک آف چائنا" کا صدر لکھا گیا تھا جس پر چین نے سخت احتجاج کیا تھا۔چین کا سرکاری نام 'پیپلز ری پبلک آف چائنا' ہے جب کہ 'ری پبلک آف چائنا' تائیوان کا سرکاری نام ہے جسے چین اپنا ایک صوبہ قرار دیتا ہے۔ معمول کی بریفنگ کے د وران چینی وزارتِ خارجہ کے ترجمان گینگ شوانگ نے صحافیوں کو بتایا کہ امریکی حکام نے اس تیکنیکی غلطی پر معذرت کا اظہار کیا ہے اور بتایا ہے کہ انہوں نے بیان درست کردیا ہے۔وائس آف امریکا نے چینی ترجمان کے بیان کی تصدیق کے لیے وائٹ ہاﺅس کے حکام سے رابطہ کیا لیکن انہوں نے معاملے پر ردِ عمل دینے سے معذرت ظاہر کی ہے۔

Most Popular