والد کو روسی وکیل سے میری ملاقات کا علم نہیں تھا۔ ڈونلڈ ٹرمپ جونیئر

والد کو روسی وکیل سے میری ملاقات کا علم نہیں تھا۔ ڈونلڈ ٹرمپ جونیئر

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے بیٹے نے کہا ہے کہ انھوں نے روسی وکیل سے اپنی ملاقات کے بارے میں اپنے والد کو کچھ نہیں بتایا ۔تاہم انھوں نے کہا کہ روسی وکیل نے کہا تھا کہ وہ انتخابی مہم میں ان کی مدد کر سکتی ہیں۔برطانوی نشریاتی ادارے کے مطابق ڈونلڈ ٹرمپ جونیئر نے فاکس نیوز کو بتایا کہ ان کی ملاقات بس یوں ہی سی‘ تھی لیکن انھیں اسے دوسری طرح سے ہینڈل کرنا چاہیے تھا۔جب ٹرمپ جونیئر سے پوچھا کہ کیا انھوں نے گذشتہ سال کی ملاقات کے بارے میں اپنے والد کو بتایا تھا تو انھوں نے کہا کہ نہیں۔ وہ کوئی بڑی بات نہیں تھی، اس میں کچھ کہنے کے لیے نہیں تھا۔میرا مطلب ہے کہ اگر آپ اس بارے سوال نہ کرتے تو مجھے وہ یاد بھی نہ آتا ۔ یہ صحیح معنوں میں 20 منٹ وقت کا ضیاع تھا ۔انھوں نے وہ ای میلز دکھائیں جس میں انھوں نے وکیل سے ملنے کی پیشکش کا خیرمقدم کیا تھا۔ وکیل کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ مبینہ طور پر وہ کریملین سے رابطے میں تھیں اور ان کے پاس ایسے مواد تھے جو ہلیری کلنٹن کو نقصان پہنچا سکتے تھے۔واضح رہے کہ امریکی تفتیش کار امریکا کے صدارتی انتخابات میں مبینہ روسی مداخلت کی جانچ پڑتال کر رہے ہیں۔

Most Popular