کشمیری میڈیا کے مطابق آٹھ جولائی سے شروع ہونے والے بھارتی مظالم میں سب سے زیادہ شہادتیں مشرقی کشمیر کےعلاقوں میں ہوئیں

کشمیری میڈیا کے مطابق آٹھ جولائی سے شروع ہونے والے بھارتی مظالم میں سب سے زیادہ شہادتیں مشرقی کشمیر کےعلاقوں میں ہوئیں

کشمیری میڈیا کے مطابق گزشتہ ستانوے روز سے جاری بھارتی یلغار کے دوران بھارتی درندوں نے مشرقی کشمیر کے اضلاع اننت ناگ، کلغام، پلواما اور شوپیاں میں قتل و غارت گری کا بازار گرم رکھا،، جہاں ساٹھ سے زائد کشمیریوں کو شہید کیا گیا، اننت ناگ ضلع میں چوبیس کشمیریوں کو شہید کیا گیا، کلغام میں چودہ، پلواما میں بارہ اور شوپیاں میں دس کشمیریوں کو بے دردی سے شہید کیا گیا۔برہان وانی کی شہادت کے بعد صرف تین دن میں تیس کشمیریوں کو شہید کیا گیا، جبکہ مظاہروں کے دوران جھڑپوں میں دوہزار سے زائد کشمیری زخمی ہوئے،مقبوضہ کشمیر میں مظالم کے باوجود کشمیری جوان، بچے اور خواتین بھارت کے ناجائز قبضے کے خلاف سڑکوں پر ہیں۔۔مقبوضہ وادی میں بدستور کرفیو نافذ جبکہ کشمیریوں کی ہڑتال بھی جاری ہے، بھارتی فوج نہتے اور مظلوم کشمیریوں پر مظالم ڈھانے میں مصروف ہے، سرینگر میں بھارتی فوج نے دو بھائیوں کو پیلٹ گن کا نشانہ بنا کر ان کی آنکھوں کی روشنی چھین لی،،، حریت رہنما آسیہ اندرابی نے کہا ہے کہ کشمیریوں پر مظالم اور ایک بیمار خاتون کو غیرقانونی طور پر حراست میں رکھنا بھارت کی نام نہاد جمہوریت کے منہ پر تمانچہ ہے،یہ کسی ایک خاتون کی آواز نہیں پورے کشمیر کی آواز ہے جسے طاقت سے دبایا نہیں جاسکتا۔۔۔

 

Most Popular