بھارت میں نوجوان نسلی امتیاز کی بھینٹ چڑھ گیا , نچلی ذات سے شادی پر نوجوان کا سرعام بے دردی سے قتل , زخمی خاتون ہسپتال میں زندگی اور موت کی کشمکش میں مبتلا

بھارت میں نوجوان نسلی امتیاز کی بھینٹ چڑھ گیا , نچلی ذات سے شادی پر نوجوان کا سرعام بے دردی سے قتل , زخمی خاتون ہسپتال میں زندگی اور موت کی کشمکش میں مبتلا

بھارت میں ذات پات کی لعنت نے نوجوان کی جان لے لی، ریاست تمل ناڈو میں چاقوؤں اور چُھروں سے مسلح افراد نے نچلی ذات کی لڑکی سے شادی کرنے والے نوجوان کو سرعام قتل کر دیا ڈالا ضلع تیروپور کے قصبے ادوملائیپتائی میں موٹر سائیکل پر سوار تین افراد نے ایک مصروف چوراہے پر موجود بائیس سالہ انجینیئر سنکار اور ان کی اہلیہ انیس سالہ کوشلیا پر حملہ کیا، حملہ آور جوڑے کو سڑک پر گھسیٹتے اور ان پر تشدد کرتے رہے جبکہ لوگوں کا ہجوم کھڑا تماشا دیکھتا رہا۔ سنکار موقع پر ہی ہلاک ہو گیا جبکہ خاتون کو تشویشناک حالت میں ہسپتال منتقل کیا گیا، ہلاک ہونے والے شخص کا تعلق دلت برادری سے بتایا گیا ہے جبکہ ان کی اہلیہ کا تعلق تھیور برادری سے ہے جو کہ جنوبی تمل ناڈو میں اکثریت میں ہیں۔ پولیس نے حملے کے الزام میں چار افراد کو گرفتار کرلیا ہے۔

Most Popular