یونان میں ترکی اور یورپی یونین کے مابین مہاجرین کے داخلے کو روکنے کیلئے کیے جانے والے معاہدے کے خلاف ہزاروں مظاہرین سڑکوں پر نکل آئے

یونان میں ترکی اور یورپی یونین کے مابین مہاجرین کے داخلے کو روکنے کیلئے کیے جانے والے معاہدے کے خلاف ہزاروں مظاہرین سڑکوں پر نکل آئے

مظاہرین کا کہنا تھا کہ یورپی یونین اور ترکی میں ہونے والے معاہدے کے باعث بلقان بارڈربند ہوگیا ہے جس کی وجہ سے مہاجرین کو یورپ میں داخلے میں شدید مشکلات کا سامنا ہے اور وہ یونان میں ہی مہاجر کیمپوں میں کسمپرسی کی زندگی گزار رہے ہیں ،،، بچوں اور خواتین سمیت مظاہرین نے یورپی یونین کے دفاتر کے باہر بھی احتجاج کیا اور مطالبہ کیا کہ مہاجرین کی مشکلات دیکھتے ہوئے معاہدے پر نظر ثانی کی جائے تاکہ جنگ زدہ ملکوں سے آنے والے لوگوں کو پناہ حاصل ہو سکے۔ دو ہزار پندرہ میں شام ، عراق اور افغانستان سے آنے والے ایک ملین سے زائد مہاجرین کے یورپ میں داخلے کے بعد گزشتہ سال بیس مارچ کو ترکی اور یورپی یونین میں معاہدہ ہوا تھا،،،، معاہدے کی رو سے قانونی دستاویزات کے بغیر یونان میں داخل ہونے والے لوگوں کو واپس ترکی میں ڈی پورٹ کردیا جائے گا۔

Most Popular