دنیا بھر میں مقیم پاکستانی آج کشمیری عوام پر بھارتی مظام کے خلاف یوم سیاہ منا رہے ہیں

دنیا بھر میں مقیم پاکستانی آج کشمیری عوام پر بھارتی مظام کے خلاف یوم سیاہ منا رہے ہیں

مقبوضہ کشمیر میں بھارت نے انسانی حقوق کی دھجیاں بکھیر دیں،،، نہتے اور معصوم کشمیریوں کے خلاف بے دریغ طاقت کے استعمال اور وحشیانہ کارروائیوں نے بھارت کا مکروہ چہرہ دنیا کے سامنے بے نقاب کردیا،قیام پاکستان سے اب تک ظالم بھارتی دہشت گردوں نے مقبوضہ کشمیر میں قتل وغارت گری کا بازار گرم کررکھا ہے، ہزاروں کشمیری جدوجہد آزادی کیلئے جام شہادت نوش کرچکے ہیں، بھارت نے رواں ماہ جون میں ریاستی دہشت گردی کی انتہا دکھاتے ہوئے نہتے کشمیریوں کے خلاف جارحیت کی نئی تاریخ رقم کردی، مقبوضہ وادی میں انسانیت سوز مظالم اور درجنوں نہتے کشمیریوں کی شہادت پر حکومت پاکستان نے یوم سیاہ منانے کا اعلان کیا،،بھارتی مظالم کے خلاف پاکستان سمیت دنیا بھر مقیم پاکستانی یوم سیاہ منا رہے ہیں، کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کیلئے ملک بھر میں ریلیاں اور جلوس نکالے جارہے ہیں جس میں بھارتی ریاستی دہشت گردی کی شدید الفاظ میں مذمت کی جارہی ہے،،، ملک میں مختلف سرکاری دفاتر میں سیاہ پرچم لہرائے گئے، دفاتر میں ملازم سیاہ پٹیاں باندھ کر حاضر ہوئے جبکہ دنیا بھر میں قائم سفارت خانوں میں خصوصی تقاریب کا اہتمام کیا گیا۔۔۔ بیرون ملک مقیم پاکستانی اقوام متحدہ کے دفاتر کے سامنے احتجاج ریکارڈ کرا رہے ہیں۔۔۔ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی جارحیت اب زیادہ دیر تک نہیں چل سکتی، بھارت کو مظالم کا سلسلہ بند کرتے ہوئے مسئلہ کشمیر کا حل کشمیری عوام کی امنگوں کے مطابق حل کرنا ہو گا۔۔۔

وزيراعظم نوازشريف کا کہنا ہے کہ ہے کہ کشمیر میں اٹھنے والی آزادی کی لہر اب تھمنے والی نہیں، جب قومیں اس طرح بیدار ہوتی ہیں تو ان کا راستہ نہیں روکا جا سکتا، مسئلہ کشمیر کو عالمی فورم پر بھی اٹھائیں گے 


مقبوضہ جموں وکشمیر میں بھارتی ظلم بربریت کے خلاف یوم سیاہ کے موقع پر وزیراعظم نوازشریف نے اپنے پیغام میں کہا ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزی، خواتین کی بےحرمتی اور بچوں کو بینائی سے محروم کرنے کے واقعات تسلسل سے ہو رہے ہیں، ان واقعات نے انسانیت پر ایمان رکھنے والے لوگوں کو دنیا بھر میں شدید مضطرب کر دیا ہے، اپنے پیغام میں وزیراعظم نے کہا کہ کسی ریاست کو یہ اجازت نہیں دی جا سکتی کہ وہ سیاسی مفاد اور ریاستی حکمت عملی کے نام پر انسانیت کے اُن مسلمہ اصولوں کو پامال کرے جن پر عالمی ضمیر ہمیشہ یک سو رہا ہے، وزيراعظم کا کہنا تھا کہ عالمی برادری کو پاکستان کے حوالے سے یہ بات بطور خاص پیش نظر رکھنا ہوگی کہ مسئلہ کشمیر میں پاکستان ایک فریق ہے، اور اقوام متحدہ نے پاکستان کو فریق مانا ہے، اب اگر کشمیر میں انسانوں کے ساتھ ظلم روا رکھا جاتا ہے تو پاکستان ان واقعات سے غیرمتعلق نہیں رہ سکتا، وزیراعظم محمد نواز شریف نے کہا کہ پاکستان آزمائش کی ہر گھڑی میں اپنے کشمیری بھائیوں کے ساتھ کھڑا ہے، اہلِ کشمیر کے ساتھ پاکستان کا تعلق ہمہ جہتی ہے، اور کشمیریوں سے ہمارا رشتہ مذہبی، تہذیبی اور انسانی ہی نہیں، بلکہ یہ انسانی لہو کا رشتہ ہے، ہم کشمیریوں کا مقدمہ ہر سفارتی، سیاسی اور انسانی حقوق کے محاذ پر لڑیں گے ۔

Most Popular