بھارت نے نہتے کشمیریوں کے خلاف بدترین مظالم کا سلسلہ شروع کر رکھاہے۔ سید علی گیلانی

بھارت نے نہتے کشمیریوں کے خلاف بدترین مظالم کا سلسلہ شروع کر رکھاہے۔ سید علی گیلانی

مقبوضہ کشمیر میں کل جماعتی حریت کانفرنس کے چیئرمین سید علی گیلانی نے کہا ہے کہ بھارت نے جموں کشمیر کو عملاً میدانِ جنگ میں تبدیل کرکے نہتے کشمیریوں کے خلاف بدترین مظالم کا سلسلہ شروع کر رکھاہے ۔ انہوںنے کہا کہ جبر و استبداد پر مبنی پالیسی کے انتہائی سنگین نتائج نکلیں گے۔ ہفتہ کوکشمیر میڈیاسروس کے مطابق سید علی گیلانی نے سرینگر میں جاری ایک بیان میں بھارتی وزیر ارون جیٹلی کے سرینگر میں دئے گئے بیان پر ردّعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ حریت قیادت نے مذاکرات کے لیے کوئی درخواست نہیں کی ہے لہذا جیٹلی کا یہ بیان کہ حریت والوں کے ساتھ کوئی بات چیت نہیں ہو گی ، بے معنی ہے۔ سید علی گیلانی نے کہا کہ حریت قیادت فاشسٹ اور جنونی طاقتوں کے ساتھ کسی قسم کی بات چیت کا کوئی شوق نہیں رکھتی اور بھارت جب تک اپنی ہٹ دھرمی ترک کرکے کشمیریوں کی امنگوں اور آرزوو¿ں کا احترام نہیں کرتا، تب تک ہماری جدوجہد جاری رہیگی ۔ حریت چیئرمین نے کہا نے کہا کہ تنازعہ کشمیر صرف کشمیریوں کے لیے ہی مشکلات کا باعث نہیں ہے، بلکہ اس کی وجہ سے پورے خطے کے اندر سیاسی غیریقینیت اور عدمِ استحکام کی صورتحال پائی جاتی ہے۔ سید علی گیلانی نے کہا کہ ہندوو انتہا پسند جس راستے پر چل رہے ہیں وہ بھارت کو تباہ و بربادی اور طبقاتی کشمکش کی طرف لے جائے گا ۔ انہوں نے دختران ملّت کی سربراہ سربراہ آسیہ اندرابی اور انکی سیکریٹری فہمیدہ صوفی پر کالا قانون پبلک سفیٹی ایکٹ لاگو کرکے انہیں جموں خطے کی امپھالہ جیل منتقل کرنے اور بھارتی فورسز کی طرف سے کشمیری طلباءپر طاقت کے وحشیانہ استعمال کی شدید الفاظ مذمت کرتے ہوئے کہا کہ پیپلز ڈیموکریٹک پارٹی اور بھارتیہ جنتا پارٹی کی اتحادی کٹھ پتلی حکومت نے مقبوضہ علاقے میں ریاستی دہشت گردی کی ایک نئی تاریخ رقم کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ آسیہ اندرابی کی صحت خراب ہے اوروہ کئی عارضوں میں مبتلا ہیں لہذا ایسی حالت میں انہیں گرمی کے اس موسم میں جموں منتقل کرنا خطرناک ثابت ہوسکتا ہے ۔ انہوں نے خبردار کیا کہ آسیہ اندرابی کو کوئی گزند پہنچی تو اس کے سنگین نتائج برآمد ہوں گے جسکی تمام تر ذمہ داری بھارتی حکومت پر عائد ہوگی۔سید علی گیلانی نے بھارتی فورسز کی طرف پیلٹ بندوق کے مسلسل استعمال پر بھی سخت تشویش ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ اب تک سینکڑوں کشمیری نوجوانوں کی بصارت پیلٹ لگنے سے متاثرہوئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ طلباءاور طالبات کے خلاف بھی پیلٹ کا استعمال کیا جاتا ہے جو سراسر ریاستی دہشت گردی ہے جسکی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے۔ انہوں نے تمام گرفتار طلباءکی رہائی اور ان ک

Most Popular