درخت ماحولیاتی آلودگی کم کرنے کا قدرتی ذریعہ ہیں پاکستان سمیت دنیا بھر میں جنگلات کا دن آج منایا جا رہا ہے

 درخت ماحولیاتی آلودگی کم کرنے کا قدرتی ذریعہ ہیں پاکستان سمیت دنیا بھر میں جنگلات کا دن آج منایا جا رہا ہے

عالمی یوم جنگلات منانے کا مقصد بیش قیمت خزانے کی اہمیت اور اسے ترقی دینے کا شعور اجاگر کرنا ہے۔ جنگلات نہ صرف زمین کے تحفظ، صاف پانی اور صاف ہوا کا ذریعہ ہیں بلکہ کاربن ڈائی آکسائیڈ کو جذب کر کے ماحولیاتی آلودگی پر بھی قابو پاتے ہیںعالمی سطح پر یومیہ پینتیس ہزار چھے سو ہیکٹر جبکہ سالانہ ایک کروڑ تیس لاکھ ہیکٹر رقبہ پر پھیلے جنگلات ختم ہو رہے ہیں۔ عالمی ادارہ خوراک کے مطابق دنیا کا اکتیس فیصد رقبہ جنگلات پر مشتمل ہے۔ پاکستان میں جنگلات کے رقبہ کی شرح کم جبکہ کٹائی کی رفتار خطرناک حد تک زیادہ ہے۔ورلڈ ڈیویلپمنٹ رپورٹ اور گلوبل فنانس کے مطابق دنیا کے205ممالک کی فہرست میں پاکستان جنگلات کے رقبے کی شرح کے حوالے سے180ویں نمبر پر ہے۔ یہاں جنگلات کا کل رقبہ تین اعشاریہ نو چار فیصد ہے۔ عالمی معیار کے تحت کسی ملک کا کم سے کم پچیس فیصد رقبہ جنگلات پر مشتمل ہونا چاہیے۔

Most Popular