مقبوضہ جموں کشمیر میں بھارتی فوج نے حریت رہنماؤں کو بھی ہراساں کرنا شروع کردیا۔

مقبوضہ جموں کشمیر میں بھارتی فوج نے حریت رہنماؤں کو بھی ہراساں کرنا شروع کردیا۔

مقبوضہ جموں و کشمیر میں بھارتی فوج نے نہتے اور مظلوم کشمیریوں پر مظالم کی داستان رقم کرنے کے بعد اب حریت رہنماؤں کے خلاف بھی سفاک کارروائیاں شروع کر دیں، آزادی کی آواز بلند کرنے والے حریت رہنماؤں پر دہشتگردی کے الزامات لگا کر جیلوں میں ڈال دیا گیا، وادی میں پکڑ دھکڑ کا سلسلہ جاری ہے، حریت رہنما شبیر شاہ کو سری نگر سے گرفتار کرلیا گیا، جبکہ یاسین ملک کو جوڈیشل ریمانڈ پر جیل متنقل کردیا گیا، انہوں نے اپنے پیغام میں کہا ہے کہ پولیس اورحکام غیر قانونی طورپرکشمیرمیں کشیدگی پیداکررہےہیں، پولیس کے حکم پر سول انتظامیہ کی کارروائیاں شرمناک ہیں۔
دوسری طرف وادی میں بھارتی فوج اور ریاستی پولیس نے گھر گھر تلاشیوں اور گرفتاریوں کا سلسلہ بھی شروع کر رکھا ہے، آل پارٹیز حریت کانفرنس نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ بھارتی انویسٹی گیشن ایجنسی انہیں ذہنی تشدد کا نشانہ بنا رہی ہے، حریت ر ہنماؤں کی گرفتاریوں اور مظالم کے خلاف کشمیریوں کا احتجاج جاری ہے، کشمیریوں نے ریلیوں کے دوران مطالبہ کیا کہ حریت رہنماؤں کو فوری طور پر رہا کیا جائے۔

Most Popular