سعودی عرب میں پہلی بار ایک روبوٹ کو مملکت کی شہریت دی گئی ہے

  سعودی عرب میں پہلی بار ایک روبوٹ کو مملکت کی شہریت دی گئی ہے

تیزی کے ساتھ معاشی انقلاب میں ترقی کی طرف گامزن سعودی عرب میں پہلی بار ایک روبوٹ کو مملکت کی شہریت دی گئی ہے، ریاض میں منعقدہ فیوچر انویسٹمنٹ انیشی ایٹیو کانفرنس کے دوران سعودی شہریت حاصل کرنے والے روبوٹ صوفیا کے ساتھ مختصر مکالمہ بھی کیا گیا،اس دلچسپ مکالمے پر مشتمل ایک مختصر فوٹیج سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی،، کانفرنس کے میزبان نے روبوٹ سے بات چیت بھی کی اور اسے بتایا کہ سعودی عرب کی شہریت ملی ہے تو اس پر صوفیا روبوٹ مسکرایا اور کہا کہ مجھے اس پر فخر ہے اور یہ بلا شبہ ایک تاریخی اقدام ہے

یوں تو جدید ٹیکالوجی کے دور میں بے شمار روبوٹ بنائے گئے ہیں، جو مختلف کام سر انجام دے رہے ہیں ، لیکن ماہرین نے ایسا روبوٹ شاہکار بنایا ہے جو نہ صرف باتیں کرتا ہے بلکہ جذبات و احساسات سے بھی عاری نہیں، انسانوں کی طرح حرکات کرتی روبوٹ صوفیہ نے دھوم مچا دی

زندگی میں جذبات اوراحساسات آکسیجن کی سی حیثیت رکھتے ہیں، لیکن جدید ٹیکنالوجی کے دور میں صرف انسانوں کے پاس ہی نہیں بلکہ روبوٹ بھی جذبات و احساسات سے عاری نہیں رہےچلتی پھرتی، باتیں کرتی خوبصورت روبوٹ، امریکی ماہرین نے ایسا شاہکار تیار کیا ہے جسے دیکھ کر انسان حیران رہ جائے، اس خوبصورت فیمیل روبوٹ کو صوفیہ کا نام دیا گیا ہےروبوٹ صوفیہ کی خاص بات یہ بھی ہے کہ نہ صرف باتیں کر سکتی ہے بلکہ کسی بھی واقعے کے حوالے سے مختلف ایکسپریشن بھی دیتی ہے، اپنی انہی خصوصیات کی بدولت اس کی مقبولیت میں بے پناہ اضافہ ہوتا جا رہا ہے۔

Most Popular