مصر میں روسی طیارہ گر کر تباہ 224 افراد ہلاک

مصر میں روسی طیارہ  گر کر تباہ 224 افراد ہلاک

غیرملکی خبر رساں ادارے کے مطابق روسی ایئر بس نے سیاحتی مقام شرم الشیخ سے عملے کے سات افراد سمیت دو سو چوبیس مسافروں کو لے کر روس کے شہر پیٹرس برگ کے لئے اڑان بھری۔ اکتیس ہزار فٹ بلندی پر پہنچ کر جہاز کا کنٹرول ٹاور سے رابطہ منقطع ہوگیا اور وہ جزیرہ نما صحرائے سینائی میں گر کر تباہ ہوگیا. جس کے نتیجے میں جہاز میں سوار سترہ بچوں سمیت دو سو چوبیس افراد ہلاک ہوگئے۔
افسوسناک حادثے کے بعد جہاز کے ملبے سے تمام لاشوں کو نکال لیا گیا جبکہ واقعہ کی تحقیقات کے لئے جہاز کا بلیک باکس بھی تحویل میں لے لیا گیا ہے۔ مصر کے قائم مقام وزیراعظم شریف اسماعیل نے ہنگامی طور پر جہاز حادثے سے متعلق کابینہ کی کرائسز کمیٹی تشکیل دے دی ہے جو اس افسوسناک واقعہ سے متعلق تمام معلومات فراہم کرے گی۔ روسی صدر ولادی میر پیوٹن نے جائے حادثہ پر ریسکیو ٹیم بھیجنے کے احکامات جاری کردیئے اور مسافر طیارے کے مصر میں تباہ ہونے پر تحقیقات کا حکم دے دیا جبکہ روسی وزیراعظم دِمتری میدویدف نے واقعہ پر گہرے دکھ کا اظہار کرتے ہوئے لواحقین کو امداد دینے کا اعلان کیا ہے۔ دوسری جانب غیر ملکی میڈیا کے مطابق داعش نے مصر میں روسی طیارہ مار گرانے کادعویٰ کیا ہے جبکہ داعش کا یہ کہنا ہے کہ طیارے کو شام میں روسی بمباری کے رد عمل میں گرایا گیا۔

Most Popular