آج پاکستان سمیت دنیا بھر میں ماؤں کا عالمی دن منایا جارہا ہے..

وہ ہستی جس کے بنانے والے نے اس کے قدموں تلے جنت رکھ دی،، جو دکھوں اور مصیبتوں کے سامنے ڈھال بن کر بچوں کو سکھ دیتی ہے،،، وہ قدرت کا نمول تحفہ ماں ہے۔۔۔ اگر یہ کہا جائے کہ ماں کے بغیر انسان کچھ نہیں تو غلط نہ ہو گا،، ماﺅں کے عالمی دن منانے کی تاریخ بہت قدیم ہے اور اس کا سب سے پہلے ذکر یونانی تہذیب میں ملتان ہے جہاں تمام دیوتاوں کی ماں ”گرہیا دیوی“ کے اعزاز میں یہ دن منایا جاتا تھا۔ سولہویں صدی میں ایسٹر سے 40 روز پہلے انگلستان میں ایک دن ”مدرنگ سنڈے“ کے نام سے موسوم تھا۔ امریکہ میں مدرز ڈے کا آغاز 1872ءمیں ہوا۔ 1907ءمیں فلاڈیفیا کی اینا جاروس نے اسے قومی دن کے طور پر منانے کی تحریک چلائی جو بالآخر کامیاب ہوئی اور 1911ءمیں امریکہ کی ایک ریاست میں یہ دن منایا گیا۔ یوں مغربی دنیا میں 16ویں صدی سے ہر سال ایسٹر کے بعد چوتھے اتوار کو یہ دن منایا جاتا ہے،،، ماں سے اظہار محبت کا عالمی دن اس بات کا تقاضہ کرتا ہے کہ ہم اپنی ماں کی قدر کریں،،، اس کی عزت کریں ،، کیونکہ انسان کی کامیابی اس کی ماں کی دعاوں ، محبت ، اور اس کیلئے کی جانے والی محنت کی ہی بدولت ہوتی ہے،

Most Popular