دہشتگردی کے خاتمے کے لیے قوم کا متفقہ بیانیہ ضروری ہے۔ صدر مملکت

دہشتگردی کے خاتمے کے لیے قوم کا متفقہ بیانیہ ضروری ہے۔ صدر مملکت

اسلام آباد میں بین الاقوامی سیرت کانفرنس کا انعقاد " قومی قیادت کے راہنما اصول" کے عنوان سے کیا گیا،، کانفرنس سے خطاب میں مہمان خصوصی صدر ممنون حسین نے پشاور دہشت گردی کی پرزور مذمت کرتے ہوئے کہا کہ عید میلاد النبیؐ کے موقع پر دہشت گردوں نےبزدلانہ کارروائی کی، دہشت گرد حملہ کرنے والوں کا کسی بھی مذہب سے کوئی تعلق نہیں ہے، پاکستانی قوم دہشت گری کو مسترد کرتی ہے اور اس کے مکمل خاتمے کے لئے پر امید ہے، صدر مملکت نے واضح کیا کہ شدت پسندی ناسور ہے جو قومی ترقی و استحکام کے لیے خطرہ ہے، دہشتگردی کے خلاف فکری یکسوئی کے لیے قوم کا متفقہ بیانیہ ضروری ہے، دنیا پیچیدہ مسائل سے دوچار ہے جس کا حل اسوہ حسنہ میں پوشیدہ ہے صدر مملکت نے واضح کیا کہ قیادت کا اصول ہے کہ وہ عوام کی بہتری و فلاح و بہبود کے لئے سر دھڑ کی بازی لگادے، دہشت گردی کے خلاف قومی بیانیہ مرتب کرنا ہو گا، شدت پسندی جیسی برائی کے خاتمہ کے لئے سب کو مل کر کام کرنا ہو گا، بین الاقوامی کانفرنس میں وزراء، علماء مشائخ اور غیر ملکی سفیروں نےبڑی تعدادنے شرکت کی۔

Most Popular