ینگ ڈاکٹر ہٹ دھرمی پر قائم،

ینگ ڈاکٹر ہٹ دھرمی پر قائم،

ینگ ڈاکٹر ہٹ دھرمی پر قائم،،، مریضوں کو دربدر ٹھوکریں کھانے کیلئے چھوڑ دیا،،، پنجاب کے چھوٹے بڑے سرکاری ہسپتالوں کا نظام درہم برہم ہو گیا،،، ایک ہفتے سے جاری ہڑتال نے مریضوں کو آٹھ آٹھ آنسو رلا دیا،،، علاج کیلئے آنے والے مریضوں کو سخت پریشانی کاسامنا ہے۔ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ وہ اپنے مطالبات کی منظوری تک ہڑتال اور احتجاج جاری رکھیں گے،،، لاہور کے سرکاری ہسپتالوں، جناح، گنگا رام، سروسز ہسپتال سمیت بڑے ہسپتالوں میں مریضوں کا کوئی پرسان حال نہیں،،، فیصل آباد، ملتان، سرگودھا، سیالکوٹ سمیت صوبے بھر کے ہسپتالوں میں ینگ ڈاکٹروں کی ہڑتال کے باعث مریضوں کو شدید پریشانی کا سامنا ہے،، سینئیر ڈاکٹرز علاج تو کر رہے ہیں لیکن صرف ایمرجنسی کی صورت میں،، پنجاب حکومت نے بھی ضدی ڈاکٹروں کے خلاف ایکشن لیتے ہوئے درجنوں کو معطل اور تنخواہوں میں کٹوتی کردی۔ ڈاکٹروں کا مطالبہ ہے کہ سنٹرل انڈکشن پالیسی ختم کیا جائے، ایڈہاک پرکام کرنے والوں کو ریگولر، نئےہسپتال بنائیے جائیں،، جبکہ معطل کئے گئے ڈاکٹروں کو دوبارہ بحال کرنے کا مطالبہ بھی سامنے آیا ہے۔

Most Popular