کراچی ضمنی الیکشن :- ایم کیوایم اورپیپلز پارٹی کے کارکن آمنے سامنے

کراچی  ضمنی الیکشن :- ایم کیوایم اورپیپلز پارٹی کے کارکن آمنے سامنے

سندھ اسمبلی کی نشست پی ایس ایک سو چودہ کے ضمنی انتخاب میں پولنگ کا عمل اس وقت بدنظمی کا شکارہوگیاجب چنیسر گوٹھ میں آزاد امیدوار کے چیف پولنگ ایجنٹ کو پیپلزپارٹی کے کارکنوں نے تشدد کا نشانہ بنایا اورپولنگ اسٹیشن کےاندرجانے سے روکا۔ جس پرآزاد امیدوارکےخامیوں نے حکومت کے خلاف نعرے بازی کی۔۔ایم کیو ایم کے رہنما محفوظ یار خان پولنگ اسٹیشن کا دورہ کرنےکیلئے پہنچے تو انہیں بھی پیپلزپارٹی کے کارکنان نے اندر جانے سے روکا جس کے بعد ایم کیو ایم اورپیپلزپارٹی کے کارکنان آمنے سامنے آگئے اتنا ہی نہیں،،اتنے میں سعد غنی پولنگ اسٹیشن پہنچے تو ایم کیو ایم کے خامیوں نے انہیں بھی اندرنہ جانے دیا۔ اس موقع پر دونوں جماعتوں کے کارکنوں نے ایک دوسرے کے خلاف خوب نعرے بازی کیحالات کشیدہ ہوئے تو پولنگ کا عمل کچھ دیرکیلئے روک دیا گیا۔۔تاہم رینجرز اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کی بھاری نفری موقع پر پہنچی اور صورت حال پر قابو پایا جس کے بعد ووٹنگ کا عمل دوبارہ شروع ہوا۔۔

Most Popular