فوجی عدالتوں کی مدت میں توسیع کے معاملے پر پارلیمانی رہنما کسی نیجے پر نہ پہنچ سکے

فوجی عدالتوں کی مدت میں توسیع کے معاملے پر پارلیمانی رہنما کسی نیجے پر نہ پہنچ سکے

فوجی عدالتوں کے قیام میں توسیع کے معاملے پر پارلیمانی رہنماوں کا اجلاس اسپیکر ایاز صادق کی زیر صدارت ہوا۔جس میں پیپلزپارٹی کے رہنما اعتزاز احسن، فاروق ایچ نائیک، تحریک انصاف کے شاہ محمود قریشی، شیریں مزاری سمیت دیگر سیاسی جماعتوں کےارکان شریک ہوئے، تاہم اجلاس ایک مرتبہ پھر بے نتیجہ ختم ہوگیااور معاملہ پر اتفاق نہ کیا جاسکا، اجلاس کے بعد میڈیا سے غیر رسمی گفتگو میں وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے کہا کہ قانون شہادت پر حکومت کو اعتراض نہیں، اپوزیشن جماعتوں کے ساتھ طے ہوا ہے کہ اسمبلی میں آئینی اور آرمی ایکٹ میں ترمیم کے بل پیش کئے جائیں گے،سینیٹ میں اپوزیشن لیڈر اعتزاز احسن کاکہنا تھا کہ عدالتوں میں توسیع سے متعلق حکومت سے اتفاق رائے نہیں ہوا، اس حوالے سے شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ اجلاس میں پیپلز پارٹی کی قانون شہادت والی تجویز پر سب کا اتفاق ہوا ہے، دیگر آٹھ نکات اور تجاویز پر کسی جماعت نے اتفاق نہیں کیا، ایم کیو ایم پاکستان نے بھی فوجی عدالتوں کے معاملے پر پرانا مسودہ بحال کرنے کی تجویز دی جب کہ عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید نے کہا کہ فوجی عدالتوں کی مدت میں دو سال کی توسیع چاہتے ہیں

Most Popular