نواز شریف کے صاحبزادے حسن اور حسین نواز اشتہاری قرار

نواز شریف  کے صاحبزادے حسن اور حسین نواز اشتہاری قرار

احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے شریف خاندان کے خلاف کرپشن ریفرنسز کی سماعت کی، مریم نواز اور کیپٹن ریٹائرڈ صفدر عدالت میں پیش ہوئے۔ مریم نواز کو نیب ریفرنس کی کاپیاں فراہم کی گئیں اور50 لاکھ روپے کے ضمانتی مچلکے جمع کرانے کا بھی حکم دیا گیا، ڈاکٹر طارق فضل چودھری نے مریم نواز کے ضمانتی مچلکے جمع کروائے، عدالت نے عدم حاضری پر سابق وزیراعظم کے صاحبزادوں حسن اور حسن نواز کو اشتہاری قرار دینے کی کارروائی کا حکم دیتے ہوئے دائمی وارنٹ جاری کئے،عدالت نے نیب کو تینوں ریفرنسز میں حسین اور حسن نواز کا مقدمہ الگ کرنے کا بھی حکم دے دیا۔
نیب نے تعمیلی رپورٹ جمع کراتے ہوئے بتایا کہ کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کو عدالت میں گرفتار کرکے پیش کیا گیا ہے، عدالت نے پچاس لاکھ روپے کے عوض کیٹپن ریٹائرڈ صفدر کی ضمانت منظور کرلی اور ان کی رہائی کا حکم دیتے انہیں مریم نواز کے ساتھ جانے کی اجازت دے دی۔ نواز شریف کے وکیل خواجہ حارث کا کہنا تھا کہ بدقسمتی سے نواز شریف حاضر نہ ہو سکے کیونکہ ان کی اہلیہ علیل ہیں،نواز شریف کی لندن روانگی کے بعد میڈیکل رپورٹ سامنے آئی لہذا 15 روز کی مہلت دی جائے۔ نیب پراسیکیوٹر نے عدالت کو بتایا کہ ملزم غائب ہے لہذا ان کے نا قابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کیے جائیں، سی پی آر سی سیکشن 92کے تحت نواز شریف کے وارنٹ جاری کئے جائیں جب کہ نواز شریف عدالت کو بتائے بغیر لندن گئے۔ نواز شریف کی جانب سے حاضری سے استثنیٰ کی درخواست اور کلثوم نوازکی میڈیکل رپورٹ عدالت میں جمع کروائی گئی، عدالت نے نواز شریف کی درخواست پر آج حاضری سے استثنیٰ کی درخواست منظور کرلی۔ کیس کی سماعت تیرہ اکتوبر تک ملتوی کردی گئی، آئندہ سماعت پر ملزمان پر فرد جرم عائد کی جائے گی۔

Most Popular