سابق آرمی چیف جنرل ریٹائرڈراحیل شریف کی سعودی عرب میں اسلامی اتحادی فوج کےبطور سربراہ تعیناتی کےمعاملےپروزیردفاع نےسینیٹ کومعلومات سےآگاہ کردیا

سابق آرمی چیف جنرل ریٹائرڈراحیل شریف کی سعودی عرب میں اسلامی اتحادی فوج کےبطور سربراہ تعیناتی کےمعاملےپروزیردفاع نےسینیٹ کومعلومات سےآگاہ کردیا

سینیٹ اجلاس میں چئیرمین رضا ربانی نے سابق آرمی چیف جنرل ریٹائرڈ راحیل شریف کی سعودی عرب میں اسلامی اتحادی فوج کی سربراہی کے حوالے سے سوال کیا, جس پر وزیر دفاع خواجہ آصف نے بتایا کہ سابق آرمی چیف نے اپنی نئی تقرری کے حوالے سے ابھی تک وزارت سے رابطہ نہیں کیا، اس حوالے سے جنرل ریٹائرڈ راحیل شریف کو کوئی این او سی بھی جاری نہیں کیا گیا, رضا ربانی نے سوال کیا کہ کیا راحیل شریف نے متعلقہ صدارت یا پاک فوج سے اجازت لی۔ جس پر خواجہ آصف نے بتایا کہ اجازت نہیں لی گئی، راحیل شریف نے صرف عمرے کا بتایا تھا, چیئرمین سینیٹ نے پوچھا کہ کیا سابق آرمی چیف نے عمرہ ادائیگی کے بعد ڈیفنس یا جی ایچ کیو کو تعیناتی کی پیشکش کا نہیں بتایا, جس پر خواجہ آصف نے بتایا کہ راحیل شریف نے کچھ نہیں بتایا, اس حوالے سے رولز میں تبدیلی کی جائے گی, چیئرمین سینیٹ نے کہا کہ اگر تبدیلی کی گئی تو اس ایوان کو بھی مطلع کیا جائے, اجلاس میں مشیر خارجہ نے بھی معاملے پر لاعلمی کا اظہار کیا، سرتاج عزیز نے کہا کہ اگر اس طرح کا معاملہ ہوا تو رولز کے مطابق دیکھا جائے گا

Most Popular