لاہور ہائیکورٹ نے سینٹرل سپیریئر سروس کا امتحان پاس کرنے والے نابینا امیدواروں کو فارن سروس اور ڈسٹرکٹ مینجمنٹ گروپ میں بھجوانے کا حکم دے دیا

لاہور ہائیکورٹ نے سینٹرل سپیریئر سروس کا امتحان پاس کرنے والے نابینا امیدواروں کو فارن سروس اور ڈسٹرکٹ مینجمنٹ گروپ میں بھجوانے کا حکم دے دیا

لاہور ہائیکورٹ کے چیف جسٹس سید منصور علی شاہ کے روبرو درخواست گزار یوسف اور فیصل مجید نے مؤقف اختیار کیا کہ انہوں نے ملک بھر سے مقابلے کا امتحان پاس کر کے بائیس ویں اور تئیس ویںپوزیشنز حاصل کیں مگر انہیں فارن سروس اور ڈسٹرکٹ مینجمنٹ گروپ کا حصہ نہیں بنایا جا رہا۔ فیڈرل پبلک سروس کمیشن کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر ہارون رشید نے عدالت کو آگاہ کیا کہ کابینہ کی منظوری سے بنائے گئے رولز نو کے تحت میرٹ پر پورا اترنے والے نابینا اور معذور امیدوار ہی آڈٹ اکاؤنٹس، کامرس اینڈ ٹریڈ، انفارمیشن اور پوسٹل گروپ کو جوائن کر سکتے ہیں۔ جس پر عدالت نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ رولز بناتے ہوئے اس کی ترجیحات کیوں بیان نہیں کی گئیں، آئین کے تحت کسی شہری سے امتیازی سلوک نہیں کیا جا سکتا مگر نابینا افراد کے لئے سخت پالیسی کیوں اختیار کی گئی۔ عدالت نے سینٹرل سپیریئرسروس کا امتحان پاس کرنے والے نابینا امیدواروں کو فارن سروس اور ڈسٹرکٹ مینجمنٹ گروپ میں بھجوانے کا حکم دے دیا، عدالت نے سی ایس ایس کے رول نو کو آئین سے متصادم قرار دیتے ہوئے کالعدم قرار دے دیا۔ عدالت نے سی ایس ایس رولز کو آئین کے مطابق بنانے کا حکم دیتے ہوئے درخواست نمٹا دی ۔

Most Popular