سندھ کے ضلع دادو میں سیلاب نے تباہی مچا دی،ستر دیہات زیرآب آنے سے ہزاروں ایکڑ پر کھڑی فصل تباہ، ہزاروں افراد پھنس گئے۔

سندھ کے ضلع دادو میں سیلاب نے تباہی مچا دی،ستر دیہات زیرآب آنے سے ہزاروں ایکڑ پر کھڑی فصل تباہ، ہزاروں افراد پھنس گئے۔

دو سال قبل آنے والے سيلاب کي تلخ ياديں سندھ کے شہريوں کے ذہنوں سے اتری نہ تھيں کہ دادو ميں ايک بار پھرپانی نے تباہی مچادی۔ اس بار پانی بلوچستان کے مختلف علاقوں سے آیا،دادو کی گاج ندی کے حفاظتی پشتے ٹوٹنے سے سیلابی پانی نے ستر دیہات نگل لیے جبکہ ہزاروں ایکڑ پر کھڑی مرچ کی فصل بھی تباہ ہوگئی۔ سیلاب کی وجہ سے یونین کونسل ڈرگ بالا، حاجی خان اور ہیرو خان سمیت متعدد دیہات کا تحصیل جوہی سے زمینی رابطہ منقطع ہوگیا ہے۔ سیلاب کے باعث گھروں میں محصور ہونے والے ہزاروں افراد حکومت کی طرف سے امدادی کارروائیوں کے منتظر ہیں۔ متاثرین کا کہنا ہے کہ گزشتہ سیلاب میں بھی حکومت نے ان کی داد رسی نہیں کی تھی اور نہ ہی ندی کے پشتے مضبوط کیے گئے لوگ اپنی مدد آپ کے تحت سیلابی علاقے سے باہر آنے کی کوشش کررہے ہیں۔ سیلاب کے باعث علاقے میں اشیاء خورونوش کی قلت پیدا ہونے پر حالات مزید خراب ہونے کا خدشہ پیدا ہو گیا ہے۔

About the author /

Waqt News

Waqt News Web Team

Most Popular