سنی اتحاد کونسل نے ملالہ یوسف زئی پر قاتلانہ حملے کے خلاف فتوی جاری کرتے ہوئے اسے غیر اسلامی اور غیر شرعی قرار دیا ہے۔

سنی اتحاد کونسل نے ملالہ یوسف زئی پر قاتلانہ حملے کے خلاف فتوی جاری کرتے ہوئے اسے غیر اسلامی اور غیر شرعی قرار دیا ہے۔

سنی اتحاد کونسل سے وابستہ پچاس سے زائد مفتیوں اور جید علماء نے ملالہ یوسف زئی پر قاتلانہ حملے کو غیر اسلامی اور غیر شرعی قرار دیا ہے۔ فتوے میں کہا گیا ہے کہ اسلام عورتوں کو تعلیم سے منع نہیں کرتا۔ ملالہ یوسف زئی پر حملہ کرنے والوں کی سوچ اسلامی شریعت سے متصادم ہے جبکہ حملہ آوروں نے اسلامی حدود کو پامال کیا ہے۔ اسلام نے انسانی جان کی حرمت ساری مخلوق سے زیادہ اہم قرار دی ہے۔ فتوے میں مزید کہا گیا ہے کہ اسکول جلانا اور عورتوں کی تعلیم کی مخالفت بھی غیر اسلامی فعل ہے۔ فتوے کے مطابق اسلام میں مرتد ہونے والی عورت کو بھی قتل کے بجائے قید کا حکم دیا جاتا ہے۔

About the author /

Waqt News

Waqt News Web Team

Most Popular