سابق وزیر اعظم نواز شریف کے لئے ایک اور مشکل کھڑی ہوگئی۔

 سابق وزیر اعظم نواز شریف کے لئے ایک اور مشکل کھڑی ہوگئی۔

اسلام آباد ہائیکورٹ کے جسٹس عامر فاروق نے سابق وزیر اعظم نواز شریف کے دوبارہ صدر بننے اور الیکشن ایکٹ کے خلاف عبوری حکم نامہ جاری کردیا۔ تحریری حکم نامہ تین صفحات پر مشتمل ہے۔ ہائیکورٹ نے عدالتی معاونت کے لئے اٹارنی جنرل کو نوٹس جاری کرنے کا حکم دیا ہے۔ الیکشن ایکٹ دوہزارسترہ دفعہ تین سو دو آئین سے متصادم ہے۔ عدالتی حکم میں کہا گیا ہے کہ آئین کے آرٹیکل باسٹھ کے مطابق دفعہ دوسوبتیس الیکشن ایکٹ خلاف دستور ہے۔ نااہلی کی سزا ترمیم شدہ آئین سے متصادم ہے۔ پرانے قانون میں نااہلی کی سزا تاحیات ہے۔ عدالت نے سیکرٹری قانون، اسٹیبلشمنٹ ڈویژن، سیکرٹری کابینہ ڈویژن، چیف الیکشن کمشنر، سیکرٹری الیکشن کمیشن کو بھی نوٹس جاری کیے عدالت نے کیس کی مزید سماعت چودہ نومبر تک ملتوی کرنے کا حکم دے دیا۔

Most Popular