چلوتیار ہوجاؤ واپس جیل جانے کیلئے، اگر آپ تعاون کریں گے تو آپ کی ضمانت کو ہاتھ نہیں لگاتے, چیف جسٹس اور ڈاکٹر عاصم کے درمیان دلچسپ مکالمہ

چلوتیار ہوجاؤ واپس جیل جانے کیلئے، اگر آپ تعاون کریں گے تو آپ کی ضمانت کو ہاتھ نہیں لگاتے,  چیف جسٹس اور ڈاکٹر عاصم کے درمیان دلچسپ  مکالمہ

ڈاکٹر عاصم حسین کی سپریم کورٹ میں پیشی کے دوران چیف جسٹس سےدلچسپ مکالمہ ہوئے ،،چیف جسٹس نے ڈاکٹر عاصم سے استفسار کیا کہ آپ تو بلکل ٹھیک ہیں، صحتمند ہیں کیوں نہ آپ کی ضمانت پر ازخود نوٹس لیں، اگر آپ ہمارے ساتھ تعاون کریں اپ کی ضمانت کو ہاتھ نہیں لگاتے ،،جواب میں ڈاکٹر عاصم نے کہا کہ عدالت جو مجھ سے مدد مانگے گی وہ میں فراہم کروگا،،میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ڈاکٹر عاصم کا کہنا تھا کہ جب تک عدالتوں سے انصاف ملتا رہیگا پاکستان قائم رہیگا،ڈاکٹرعاصم نے مزید کہا کہ میڈیکل کے شعبہ میں جو کالی بھیڑیں ہے ان کو سزا ملنی چائیے،سپریم کورٹ میں سماعت کے دوران چیف جسٹس کا ڈاکٹر عاصم سے دلچسپ مکالموں کاتبادلہ ہوا،، جواب میں ڈاکٹر عاصم نے کہا عدالت اس لئے آیا ہوں کے آپ سے تعاون کر سکیں

Most Popular