پاکستان سمیت دنیا بھرمیں آج یوم شہدائے کشمیر منایا جائے گا

پاکستان سمیت دنیا بھرمیں آج یوم شہدائے کشمیر منایا جائے گا

تیرہ جولائی انیس سو اکتیس کا دن کشمیر کی تاریخ میں انتہائی اہمیت کا حامل ہے۔ یہی وہ دن تھا کہ جب سری نگر کی سنٹرل جیل کے باہر ڈوگرہ فوج نے بدترین ریاستی دہشت گردی کا مظاہرہ کرتے ہوئے 22 نہتے کشمیریوں کو شہید کیا
اس افسوناک واقعہ کی شروعات اکیس جون انیس سو اکتیس سے ہوئی جب خطبہ عید کی بندش اور توہین قرآن کے خلاف احتجاج کے دوران عبدالقدیر نامی نوجوان کو بغاوت کا مقدمہ بناتے ہوئے گرفتار کیا گیا، تیرہ جولائی انیس سو اکتیس کو مقدمے کی سماعت کے دوران ہزاروں کشمیری سری نگر سینٹرل جیل کے باہر جمع ہوئے،،، نماز کا وقت ہوا اور ایک نوجوان نے آگے بڑھ کر آذان دینا شروع کی تو بھارتی فوج کے اہلکار نے اسے گولی مار کر شہید کردیا،، ایک کے بعد ایک نوجوان آگے بڑھتا رہا ہے اور پوری آذان ختم ہونے تک بائیس نوجونوں نے اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کردیا
واقعہ کو کئی دہائیاں بیت گئیں ، لیکن ان شہداء کی قربانیوں کو آج بھی اسی طرح یاد کیا جا تا ہے جنہوں نے اس وقت اپنے آج کو کشمیری قوم کے کل کیلئے قربان کر دیا۔ کشمیریوں کی جدوجہدآزادی پوری قوت سے جاری ہے اورجگہ جگہ پاکستانی پرچم لہرائے جارہے ہیں۔ ضرورت اس امرکی ہے کہ پاکستانی حکمران بھی محض بھارت سے یکطرفہ دوستی اور ہندوبنئے کی خوشنودی کیلئے کشمیریوں کے جذبات مجروح نہ کریں، پاکستان قومی اور ا صولی موقف پرکاربند رہتے ہوئے مسئلہ کشمیر پر دو ٹوک موقف اپنائے تاکہ انہیں آٹھ لاکھ بھارتی فوج کے ظلم وتشدد سے نجات دلائی جاسکے

Most Popular