پاک فوج نے دہشتگردوں کے خلاف آپریشن خیبر فور کا آغاز کردیا

پاک فوج نے دہشتگردوں کے خلاف آپریشن خیبر فور کا آغاز کردیا

ترجمان پاک فوج میجر جنرل آصف غفور نے خیبرفور آپریشن کی تفصیلات کے بارے میں بتاتے ہوئے کہا کہ پاک فوج نے دہشتگردوں کے خلاف وادی راجگال میں آپریشن کا آغاز کردیا ہے, آپریشن خیبر فور ردالفساد کا حصہ ہے، جو انتہائی دشوار گزار سنگلاخ اور اونچی پہاڑیوں پر مشتمل ہے، اس کا مقصد سرحد پار موجود داعش کو کارروائیوں سے روکنا ہے, داعش کا کوئی منظم انفراسٹرکچر پاکستان میں نہیں,ترجمان پاک فوج کا کہنا تھا کہ راجگال آپریشن شروع کرنے سے پہلے افغان حکام کو آگاہ کیا گیا اس کے باوجود افغان فورسز سرحد پر موجود نہیں،، یہ جنگ اسی لیے مشکل ہے کہ کسی کے ماتھے پرنہیں لکھا کہ وہ دہشتگرد ہے،انہوں ںے بتایا کہ ضرب عضب 2014 میں شروع کیا جس کے تحت سارا علاقہ کلیئر کرالیا گیا،، شوال کوبھی جلدکلیئرکردیاجائےگا۔۔ انٹیلی جنس معلومات کی بنیاد پر9 ہزار سے زائد آپریشن کیے گئے, دہشت گردوں کی کمین گاہوں کو ختم کیا جائے گا,ترجمان پاک فوج کا کہنا تھا کہ سرحدوں پر نگرانی سخت کر کے دہشتگردوں کی نقل و حرکت روکیں گے، افغانستان میں افغان فورسز اور حکام کا کنٹرول کم ہو رہا ہے، میجر جنرل آصف غفور نے ایک بار پھر واضح کیا کہ سی پیک منصوبہ پاکستان کی ترقی کا ضامن ہے ہم اسے بھرپور سیکیورٹی فراہم کریں گے۔ترجمان پاک فوج کا کہنا تھا کہ کراچی میں دہشتگردی کے واقعات میں 98 فیصد کمی آئی ہے،،،، فوجی عدالتوں میں 40 مقدمات زیر سماعت ہیں، پارہ چنار دھماکوں کے ملزمان کا کیس فوجی عدالتوں میں چلے گا،

Most Popular