جے آئی ٹی نے قطری شہزادے سے پوچھ گچھ کے لیے قطر جانے کا فیصلہ کرلیا

جے آئی ٹی نے قطری شہزادے سے پوچھ گچھ کے لیے قطر جانے کا فیصلہ کرلیا

پاناما کیس کی جے آئی ٹی نے قطری شہزادے سے پوچھ گچھ کا فیصلہ کرلیا جس کے لیے جے آئی ٹی نے قطر جانے کے لیے سپریم کورٹ رجسٹرار آفس سے رابطہ کیا جس میں موقف اختیار کیا گیا کہ حمد بن جاسم الثانی کا بیان ریکارڈ کرنے کے لیے قطر جانا ضروری ہے۔۔۔جے آئی ٹی کی جانب سے رابطہ کرنے پر سپریم کورٹ رجسٹرار آفس نے اپنے جواب میں کہا ہے کہ جے آئی ٹی تحقیقات کے لیے آزاد ہے۔ ذرائع کے مطابق سپریم کورٹ رجسٹرار آفس سے باضابطہ اجازت ملتے ہی جے آئی ٹی کے دو ارکان قطر روانہ ہوجائیں گے۔ واضح رہے کہ جے آئی ٹی نے انیس مئی کو قطری شہزادے کوخط لکھ کر پیش ہونے کا حکم دیا تھا جس پر شیخ حمد بن جاسم نے اپنے جواب میں سپریم کورٹ میں پیش کئے گئے دونوں خطوط کی تصدیق کرتے ہوئے کہا تھا کہ وہ جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہونے کے لیے پاکستان نہیں آسکتے اگر ان کا بیان لینا ضروری ہے تو جے آئی ٹی کے ارکان قطر آ سکتے ہیں۔۔ جے آئی ٹی کی تحقیقات میں قطری شہزادے کا بیان اہمیت کا حامل ہے۔۔ یہ بیان لندن فلیٹس کی ملکیت کے حوالے سے سمت کا تعین کرے گا۔۔

Most Popular