بلوچستان کا مالی سال 2017-18 کا 3کھرب 28ارب روپےسےزائد مالیت کابجٹ پیش

بلوچستان کا مالی سال 2017-18 کا 3کھرب 28ارب روپےسےزائد مالیت کابجٹ پیش

بلوچستان کےبجٹ دوہزارسترہ اٹھارہ میں سرکاری ملازمین کی تنخواہوں اور پنشن میں وفاق کی طرزپردس فیصداضافہ تجویز کیاگیاہے ،، جبکہ کم سےکم تنخواہ پندرہ ہزارروپےکرنےکااعلان کیاگیاہے۔۔ صوبےکےتمام اِسکولوں میں فرنیچر، لکھائی پڑھائی کا سامان، سائنسی آلات،ٹاٹ اور کھیلوں کے سامان کی کمی دورکرنےکےلیےتین سو باون اعشاریہ پانچ ملین روپےرکھےگئےہیں۔۔جبکہ پانچ سو پرائمری اِسکولوں کومِڈل اِسکولوں کا درجہ دِیا جائےگا۔ اورپانچ سومِڈل اِسکولوں کوہائی اسکول کادرجہ دینے کی منصوبہ بندی کی گئی ہے،،صوبے کےچودہ ہزارباصلاحیت اورہونہارطلباوطالبات کوملکی وغیرملکی مستندتعلیمی اِداروں کےلیےوظائف دیئےجائیں گے،، آئندہ مالی سال میں شعبہ صحت کےلیےغیرترقیاتی بجٹ کی مدمیں سترہ اعشاریہ چھ بلین اور امن و امان کیلئےتیس اعشاریہ چھ بلین روپےمختص کئےگئےہیں۔ اس کے علاوہ پانچ سو واٹرسپلائی ٹیوب ویلوں کوسولر پینل پر منتقل کرنےکیلئےایک سو تہتر اعشاریہ چھ کروڑ رپے خرچ کیے جائیں گے۔۔

Most Popular