لاجواب سروس فراہم کرنے والے باکمال لوگوں کا ایک اور کارنامہ سامنے آگیا، برطانیہ کی نیشنل کرائم ایجنسی نے قومی ایئرلائن کی تلاشی کے دوران منشیات برآمد کرنے کا دعوی کردیا ہے

لاجواب سروس فراہم کرنے والے باکمال لوگوں کا ایک اور کارنامہ سامنے آگیا،  برطانیہ کی نیشنل کرائم ایجنسی نے قومی ایئرلائن کی تلاشی کے دوران منشیات برآمد کرنے کا دعوی کردیا ہے

پی آئی اے کو خسارے سے نکالنے کیلئے ایک طرف حکومت نت نئے طریقے اپناتی ہے تو دوسری طرف ایسا کام ہوجاتا ہے جو ساری محنت پر پانی پھیر دیتا ہے کچھ ایسا ہی پیر کے روز ہوا جب پی آئی اے کی پرواز پی کے سات سو پچاسی اسلام آباد سے لندن پہنچی تو اسے واپس جانے سے روکدیا گیا , پی آئی اے کی پرواز کو لندن سے لاہور جانا تھا، لیکن برطانیہ کی نیشنل کرائم ایجنسی نے طیارے میں منشیات کے شبے میں پرواز کو جانے نہ دیا اور عملے کو بھی حراست میں لے لیا, برطانوی حکام کا دعوی ہے کہ پی آئی اے طیارے کی تین گھنٹے تلاشی لی گئی اور مختلف حصوں کی سے منشیات برآمد ہوئی،عملہ کیمرے اور سراغ رساں کتوں کے ساتھ تھے، اہلکاروں نے عملے کے تیرہ ارکان سے کئی گھنٹے پوچھ گچھ کی۔۔ طیارے کو تلاشی کے بعد کلیئر کرکے تاخیر سے پاکستان روانہ کردیا گیا, برطانوی نشریاتی ادارے کے مطابق پی آئی اے کے اس طیارے سے پہلے بھی مرمت کے دوران منشیات برآمد ہوئی تھیں۔ یہ طیارہ پی آئی اے کا بوئنگ سیون سیون سیون کا دو سو چالیسواں ورژن ہے

Most Popular