چوبیس گھنٹے کے دوران ملک بھرمیں ہونے والے کومبنگ آپریشن میں100 سے زائد دہشت گرد مارے گئے

چوبیس گھنٹے کے دوران ملک بھرمیں ہونے والے کومبنگ آپریشن میں100 سے زائد دہشت گرد مارے گئے

درندہ صفت دہشت گردوں کو انجام تک پہنچانے کا وقت آ گیا, سانحہ سیہون شریف کے بعد ملک بھر میں آپریشن شروع کر دیا گیا ہے, آئی ایس پی آر کے مطابق گزشتہ چوبیس گھنٹے کے دوران سکیورٹی فورسز کے کومبنگ آپریشنز میں سو سے زائد دہشت گرد مارے گئے ہیں, بڑی تعداد میں دہشت گردوں کو گرفتار کر کے اسلحہ برآمد کر لیا گیا ہے,آئی ایس پی آر کی جانب سے جاری تفصیلات کے مطابق پنجاب سمیت ملک بھر میں انٹیلی جنس بنیادوں پر آپریشنز کیے جا رہے ہیں,انٹیلی جنس ایجنسیاں دہشت گردی کے حالیہ واقعات کے پیچھے عناصر کو بے نقاب کرنے کے لیے کام کر رہی ہیں۔۔ یہ بات واضح ہے کہ دہشت گردوں کے تانے بانے سرحد پار سے ملتے ہیں,جمعرات کی شب سے پاک افغان سرحد کو سکیورٹی بنیادوں پر مکمل سیل کر دیا گیا ہے, افغانستان سے پاکستان کی جانب کسی کو بھی غیر قانونی داخلے کی اجازت نہیں دی جائے گی, سکیورٹی فورسز کو خصوسی احکامات جاری کیے گئے گئے ہیں کی سرحد کی کڑی نگرانی کی جائے اور کسی کے ساتھ رعایت نہ برتی جائے۔۔۔ افغان حکام کو چھہتر دہشت گردوں کی فہرست دی گئی ہے جو وہاں چھپے ہوئے ہیں۔۔ یہ افراد پاکستان میں ہونے والی دہشت گردی کو پلان، سپورٹ اور کنٹرول کر رہے ہیں,افغان حکام سے کہا گیا ہے کہ یا تو ان دہشت گردوں کیخلاف کارروائی کریں یا پاکستان کے حوالے کیا جائے۔۔ پاک افغان سرحد پر چھپے دہشت گردوں کو موثر انداز میں نشانہ بنایا جا رہا ہے, آرمی چیف کہ چکے ہیں کہ پاک فوج پاکستانی عوام کی حفاظت کے لیے ہے ، قوم کو اپنی سکیورٹی فورسز پر اعتماد ہونا چاہیے، ہم کسی بھی قیمت پر دشمنوں کا ایجنڈا کامیاب نہیں ہونے دیں گے

Most Popular