راجن پور کی تحصیل روجھان میں سیلاب کے باعث تعلیمی سرگرمیاں تاحال شروع نہ ہو سکیں

راجن پور کی تحصیل روجھان میں سیلاب کے باعث تعلیمی سرگرمیاں تاحال شروع نہ ہو سکیں

روجھان دریائے سندھ میں طغیانی سیلابی ریلے سے بچاؤ بند پر پانی کے مسلسل دباؤ کے بعد خطرہ بڑھ رہا ہے، ضلعی انتظامیہ بند کو مضبوط کرنے اور نشیبی علاقوں کو بچانے کیلئے اپنے تئیں کوششیں کر رہی ہے، رکن پنجاب اسمبلی عاطف مزاری نے کہا کہ بھاری مشینری کے ذریعے پانی کا رخ تبدیل کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے۔ دوسری طرف سیلاب سے متاثرہ علاقوں میں تاحال تعلیمی سرگرمیاں شروع نہ ہو سکیں۔ رحیم یار خان کے علاقے ڈیرہ مشیر کی خیمہ بستی میں سیلاب متاثرین سے خیمے واپس لینے پر ضلعی انتظامیہ کے خلاف احتجاج کیا گیا۔ متاثرین کا کہنا تھا کہ سیلاب زدہ علاقوں میں پانی اتر جانے تک ڈی سی او نے خیمے واپس نہ لینے کی یقین دہانی کرائی تھی۔ اِدھر چترال میں پاک فوج کی جانب سے متاثرہ علاقوں میں امداد کا سلسلہ جاری ہے، متاثرین کی مدد کیلئے پہلے ڈیڑھ سو ٹن سامان پہنچایا، اب مزید دو سو ٹن سامان پہنچا دیا گیاہے۔امدادی سامان میں گھی، چینی ، آٹا، چائے کی پتی،دال اور آشیائے خورونوش شامل ہیں۔

Most Popular