سند ھ طاس معاہدے پر بات چیت کے لئے دس رکنی بھارتی وفد لاہور پہنچ گیا،

سند ھ طاس معاہدے پر بات چیت کے لئے دس رکنی بھارتی وفد لاہور پہنچ گیا،

پاک بھارت انڈس واٹر کمشنرز کے مابین مذاکرات کا سلسلہ بحال ہو گیا،،، بھارتی انڈس واٹر کمشنر پی کے سکسینہ کی قیادت میں 10 رکنی وفد واہگہ بارڈر کے راستے لاہور پہنچا،، جہاں پاکستانی حکام نے ان کا استقبال کیا۔۔۔ بھارتی وفد کو سخت سیکیورٹی میں اسلام آباد روانہ کیا گیا،،، دونوں ممالک کے درمیان ڈیڑھ سال کے تعطل کے بعد دوبارہ مذاکرات بحال ہوئے ہیں،،، اسلام آباد میں پانی کے معاملے پر دونوں ممالک کے درمیان مذکرات ہونگے،،، پاکستان اوربھارت میں سندھ طاس معاہدہ 1960 میں طے پایا تھا، بیاس راوی اور ستلج کا پانی بھارت کو مل گیا جبکہ دریائے چنا ب ،جہلم اور سندھ پاکستان کے حصے میں آئے۔ معاہدے کے تحت ہر سال دونوں ملکوں کا ایک اجلاس لازمی قرارپایا ،،، لیکن بھارت کی ہٹ دھرمیوں کے باعث معاہدے پر سو فیصد عمل درآمد ہوسکے ،،، بھارت معاہد ے کی خلاف ورزی کرتے ہوئے پانچ بڑے ڈیم بنا چکا ،2025 تک کشمیر اور دیگر علاقوں میں پاکستانی پانی پر 262 ڈیم بنانا چاہتا ہے۔

Most Popular