آصف علی زرداری نے پاناما کیس پر سپریم کورٹ کا فیصلہ مسترد کر دیا

آصف علی زرداری نے پاناما کیس پر سپریم کورٹ کا فیصلہ مسترد کر دیا

سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد اپنے ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے آصف زرداری نے کہا کہ پاناما کیس پر سپریم کورٹ کے فیصلے کو مسترد کرتے ہیں۔۔ انہوں نے کہا جے آئی ٹی بنانا وزیراعظم کو راہ فرار دینے کے مترادف ہے جو کام اعلیٰ عدلیہ کے ججز نہ کر سکے وہ گریڈ انیس کا افسر کیسے کرے گا۔۔ آصف زرداری نے کہا کہ عمران خان نے سپریم کورٹ جاکر نواز شریف کو بچایا اگر وہ ہمارے ساتھ چلتے تو زیادہ بہتر نتائج نکلتے, عمران خان نے ثابت کر دیا وہ ناتجربہ کار سیاستدان ہیں,آصف زراری نے کہا کہ اختلافی نوٹ لکھنے والے اور وزیر اعظم کو نااہل قرار دینے والے دو ججوں کو سلام پیش کرتا ہوں۔ ان ججوں نے اپنے اختلافی نوٹ میں لکھا کہ نواز شریف صادق اور امین نہیں ہیں۔ ان دو ججوں کی رائے ہی سپریم کورٹ کا فیصلہ ہے,آصف زرداری نے وزیراعظم نواز شریف کے استعفے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ ان کا اخلاقی طور پر وزیراعظم رہنے کا کوئی جواز نہیں, تاہم وہ یہ بھی جانتے ہیں کہ وزیراعظم آخر وقت تک استعفیٰ نہیں دیں گے۔۔ انہوں نے کہا کہ فیصلے پر مٹھائی بانٹنے والوں کو شرم آنی چاہیے,آصف زرداری نے یہ شکوہ بھی کیا کہ پیپلزپارٹی کو کبھی عدالتوں سے انصاف نہیں ملا,ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ عدالت کے اس فیصلے سے جمہوریت اور انصاف کو نقصان پہنچا ہے

Most Popular