قومی اسمبلی کا اہم اجلاس آج ہو رہا ہے، فوجی عدالتوں کے قیام میں مزید 2سال کی توسیع کے لیے 28 آئینی ترمیم ایوان میں پیش کی جائے گی

قومی اسمبلی کا اہم اجلاس آج ہو رہا ہے، فوجی عدالتوں کے قیام میں مزید 2سال کی توسیع کے لیے 28 آئینی ترمیم ایوان میں پیش کی جائے گی

قومی اسمبلی کا اہم اجلاس سپیکر ایاز صادق کی زیر صدارت ہوگا، وزیر قانون زاہد حامد ایوان میں فوجی عدالتوں کے قیام میں مزید دو سال کی توسیع کیلئے اٹھائیس ویں آئینی ترمیم کا بل ایوان میں پیش کریں گے،،، ترمیم میں پیپلزپارٹی کی چار تجاویز بھی شامل ہوں گی، اپوزیشن کی ترامیم کے تحت فوجی عدالتوں کی کارروائی میں قانون شہادت کا اطلاق ، ملزم کو گرفتار ی کی وجوہات بتا کر24 گھنٹوں میں ہی فوجی عدالت کے سامنے پیش کرنے اور ملزم کو وکیل کرنے کا حق دینے کی شقیں بھی شامل کی گئی ہیں،،ایوان میں حکومت کی جانب سے پارلیمانی رہنماؤں پر مشتمل قومی سلامتی کمیٹی کی تشکیل کی قرارداد بھی پیش کرے گی۔ جو فوجی عدالتوں، نیشنل ایکشن پلان اور دہشت گردی کےخلاف جنگ سےجڑے ہر معاملے کی نگرانی کرےگی، آڈیٹر جنرل کی ملازمت و اختیارات کے حوالے سے بھی بل وزیر خزانہ اسحاق ڈار پیش کریں گے۔۔۔ ذرائع کے مطابق وزیراعظم نواز شریف کی بھی قومی اسمبلی کے اہم اجلاس میں شرکت متوقع ہے۔ حکمران جماعت مسلم لیگ ن اور پیپلز پارٹی نے اپنے ارکان کو اجلاس میں حاضری یقینی بنانے کی ہدایت کر دی۔

Most Popular