پاکستان نے کلبھوشن کی والدہ اور اہلیہ کیساتھ آنے والے سفارتکار بارے معلومات مانگیں تو بھارت راہ فرار اختیار کرنے لگا

پاکستان نے کلبھوشن کی والدہ اور اہلیہ کیساتھ آنے والے سفارتکار بارے معلومات مانگیں تو بھارت راہ فرار اختیار کرنے لگا

پاکستان میں سزائے موت پانے والے بھارتی جاسوس کلبھوشن جادیو کیساتھ اہلیہ اور والدہ سے ملاقات کا معاملہ مشکلات کا شکار ہو گیا۔ سفارتی ذرائع کے مطابق نئی دلی نے ہٹ دھرمی کا مظاہرہ کرتے ہوئے کلبھوشن کے اہل خانہ کیساتھ آنے والے بھارتی سفارتکار کے متعلق ضروری معلومات فراہم نہیں کیں۔ ادھر پاکستان کی جانب سے اس ضمن میں تمام تر تیاریوں کو حتمی شکل دی جا رہی ہے اور دفترخارجہ میں ابھی سے سخت سکیورٹی انتظامات کر لیے گئے ہیں۔ بھارت نے اپنے سفارتکار کی معلومات رات گئے تک فراہم نہ کیں تو اس تاریخی ملاقات کے امکانات معدوم ہو جائیں گے۔ ذرائع کے مطابق کلبھوشن جادیو کو دفترخارجہ میں لانے اور سکیورٹی انتظامات کو حتمی شکل دینے کیلیے وقت درکار ہے۔ تاہم بھارت اپنے سفارتکار سے متعلق معلومات فراہم کرنے سے بھاگ رہا ہے۔ ادھر سفارتی ذرائع نے اس بات کی تردید کی ہے کہ یہ کلبھوشن جادیو کیساتھ اہلخانہ کی آخری ملاقات ہے کیونکہ بھارتی جاسوس کی سزائے موت کے فیصلے پر فوری عملدرآمد کا کوئی فیصلہ نہیں ہوا ہے۔ اگر آرمی چیف چاہیں تو اس فیصلے پر نظرثانی بھی ممکن ہے۔ واضح رہے کہ بھارت نے کلبھوشن کی والد اور والدہ سے ملاقات کی اپیل کی تھی تاہم خود کلبھوشن نے اپنی اہلیہ سے ملنے کی خواہش کا اظہار کیا تھا۔ تاہم پاکستان نے انسانی ہمدردی کی بنا پر کلبھوشن جادیو کی والدہ اور اہلیہ کو ملاقات کی اجازت دی تھی۔ قومی و بین الاقوامی بالخصوص بھارتی میڈیا کو ملاقات کی کوریج کی اجازت دی گئی ہے۔

Most Popular