بارش کے بعد دریاﺅں میں طغیانی اور ڈیموں میں پانی کی سطح بلند اور دیحات تباہی کا شکار

بارش کے بعد دریاﺅں میں طغیانی اور ڈیموں میں پانی کی سطح بلند اور دیحات تباہی کا شکار

دریائے چناب اور جہلم میں نچلے درجے کا سیلاب ہےجبکہ انتظامیہ کی جانب سے نقل مکانی کے اعلان کےبعد بھیرہ میں لوگوں نے نقل مکانی شروع کردی ہے۔

ضلعی انتظامیہ کی جانب سے دریائے چناب اور دریائے جہلم کے اردگرد کے علاقوں میں ہائی الرٹ جاری کر دیا گیا اور مساجد میں اعلانات کیے جا رہے ہیں۔ سرگودھا میں دریائے جہلم میں ڈیڑھ لاکھ سے تین لاکھ کیوسک کا ریلہ آئندہ چوبیس گھنٹے میں گزرے گا جس کےباعث قریبی علاقوں کو خالی کرالیا گیا ہےجبکہ دیگر علاقوں سے نقل مکانی کا سلسلہ جاری ہے۔سیالکوٹ میں دریائے چناب میں اس وقت نچلے درجے کا سیلاب ہے۔دریائے چناب ہیڈ مرالہ کے مقام پر پانی کی آمد آٹھ لاکھ نو ہزار نوسوبانوے کیوسک جبکہ اخراج سات لاکھ دو ہزار کیوسک ہے۔ چیف ریلیف کمشنر پنجاب ندیم اشرف نے سیالکوٹ میں ندی نالوں اور دریاؤں کے کناروں اور پشتوں کا دورہ کیا ہے۔اس موقع پران کا کہنا تھا کہ سیلاب سےبچاؤ کیلئے اقدامات کررہےہیں۔ضلعی انتظامیہ سیلاب سے نمٹنے کیلئے پوری طرح ہائی الرٹ ہے۔

دریائے سندھ میں خیرآباداٹک کےمقام پراونچےدرجےکاسیلاب ہے۔فلڈ فورکاسٹنگ سیل کےمطابق آج دریائے سندھ میں کالاباغ کےمقام پرپانچ سےچھ لاکھ کیوسک کاریلا گزرےگا 

پی ڈی ایم اے کےمطابق دریائے سندھ میں چشمہ کےمقام پرساڑھےپانچ سےچھ لاکھ کیوسک کاریلا گزرےگا،چشمہ اورکالاباغ کےمقام پرسیلاب کےباعث قریبی علاقے متاثر ہونے کاخدشہ ہے۔دریائےسندھ میں کالاباغ کےمقام پرپانچ سے چھ لاکھ کیوسک کاریلاگزرےگا۔فلڈ فور کاسٹنگ ڈویژن کےمطابق سکھربیراج میں پانی کااخراج چارلاکھ انتالیس ہزارچارسوبانوے کیوسک رکارڈ کیا گیا ہے۔دریائےسندھ میں گڈوپرپانی کا اخراج پانچ لاکھ دس ہزار پانچ سو کیوسک ہے۔دریائے سندھ میں خیرآباد اٹک کےمقام پراونچےدرجےکاسیلاب ہے۔خیرآباد اٹک پر دریائےسندھ میں پانی کابہاؤ پانچ لاکھ بہتر ہزارآٹھ کیوسک ہے۔خیبر پی کے میں دریائے ادیزئی میں ادیزئی پل کے مقام پر درمیانے درجے کا سیلاب ہے۔نوشہرہ میں دریائےکابل میں پانی کابہاؤ ایک لاکھ بتیس ہزارسات سو کیوسک رکارڈ کیا گیا ہے۔دیر میں دریائےپنجکوڑا اورخوازہ خیلہ میں دریائےسوات میں نچلے درجے کا سیلاب ہے۔دریائے سوات خیالی،دریائے ناگمان اوردریائےشاہ عالم میں نچلے درجے کا سیلاب ہے۔


ملک بھر میں مون سون بارشوں اور دریاؤں میں طغیانی سے ڈیمز میں بھی پانی کی سطح بلند ہوگئی۔


ملک کے سب سے بڑےتربیلا ڈیم میں پانی کی آمد میں اضافے سے ڈیم میں پانی کی سطح پندرہ سو چالیس فٹ تک پہنچ گئی ہے ۔ڈیم میں پانی کی آمد چارلاکھ ایک ہزار کیوسک جبکہ پانی کا اخراج تین لاکھ چون ہزار کیوسک ہے۔تربیلاڈیم کےچودہ پیداواری یونٹس سےچھتیس سومیگاواٹ بجلی پیدا ہورہی ہے۔منگلا ڈیم میں پانی کی سطح بارہ سو سینتیس فٹ تک پہنچ گئی ہے ڈیم میں پانی کی آمد ایک لاکھ دو ہزا سات سو تینتیس کیوسک جبکہ اخراج بھی ایک لاکھ دوہزا سات سو تینتس کیوسک ہے اسطرح ڈیم میں پانی ذخیر کرنے کےبجائے پانی کا اخراج جاری ہے۔

Most Popular